سابق صدر زین کی واپسی کی کوئی امید نہیں، تیونس

Posted: 08/03/2012 in All News, Important News, Saudi Arab, Bahrain & Middle East, Tunis / Egypt / Yemen / Libya

تیونسیہ: حکومت تیونس نے سابق جلا وطن صدر زین العابدین بن علی کو ٹرائل کے لیے وطن واپس لانے بارے ناامیدی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ سعودی عرب کبھی بھی بن علی کو ملک بدر نہیں کرے گا تاہم کوشش جاری رہے گی۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق تیونس میں عوامی انقلاب کے بعد منتخب ہونے والے صدر تیونس منصف قرزوقی نے کہا کہ سابق صدر زین العابدین کو ٹرائل کے لیے واپس وطن لانے بارے حکومت تمام تر کوششیں کر رہی ہے اور سعودی عرب حکومت پر اس حوالے سے دبائو ڈالا جا رہا ہے کہ وہ سابق صدر کو اپنے ملک کے حوالے کرے تاکہ ان کا ٹرائل کیا جائے تاہم اس امید کا اظہار نہیں کیا جاسکتا کہ سعودی عرب انہیں ملک بدر کرے گا چونکہ وہاں کی اپنی روایات اور قوانین ہیں۔ واضح رہے کہ زین العابدین کو تیونس کی عدالت نے گزشتہ سال کرپشن سمیت مختلف جرائم کے الزام میں پینتیس سال قید کی سزا سنائی تھی۔

Comments are closed.