مسلک کے نام پر منافرت پھیلائی جا رہی ہے، محمد یاسین ملک

Posted: 07/03/2012 in Afghanistan & India, All News, Important News, Pakistan & Kashmir

خانقاہ غوثیہ سرائے بالا میں زائرین کی ایک بڑی تعداد سے خطاب کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ کے چیئرمین کا کہنا تھا کہ ہم ایک عرصہ دراز سے اپنی آزادی کی جدوجہد میں قربانیاں دے رہے ہیں۔ اس راہ عزیمت میں ہم نے بیش بہا قربانیاں رقم کی ہیں۔ لبریشن فرنٹ چیئرمین محمد یاسین ملک نے یکسوئی، اتحاد و اتفاق اور مکمل نظم و ضبط قائم رکھنے کی اپیل کرتے ہوئے خبردار کیا ہے کہ ممبر و محراب، مساجد اور خانقاہوں کو منافرت اور تفرقہ بازی کا ذریعہ یا مرکز نہ بنایا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ہماری چار نسلیں جدوجہد کی راہ میں قربان ہو چکی ہیں اور تحریک کے تئیں یکسوئی وقت کی اہم ترین ضرورت ہے۔ تفصیلات کے مطابق خانقاہ غوثیہ سرائے بالا میں زائرین کی ایک بڑی تعداد سے خطاب کرتے ہوئے لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے کہا کہ دین اسلام ایک مکمل ضابطہ حیات ہے اور اس نے ہمیں روحانی قدروں کے ساتھ زندگی گزارنے کا سبق دیا ہے۔ یہ دین ایک عملی دین ہے جو زندگی کے ہر شعبے اور گوشے میں ہماری مکمل راہنمائی کرتا ہے۔حضرت پیر کامل شیخ عبدالقادر جیلانی رہ نے ہمیں دکھا دیا کہ اللہ کا ہو کر کس طرح اور کیسے زندگی گزاری جا سکتی ہے۔ حضرت شیخ کامل کی پاک زندگی سے ہمیں یہی درس ملتا ہے اور آج ہمیں بھی یہاں یہ عہد کرنا ہو گا کہ چاہے کچھ بھی ہو ہم اپنے ان روحانی پیروں کے فرمودات سے منہ نہیں موڑیں گے۔محمد یاسین ملک نے جملہ مسالک کے ذمہ داروں اور جماعتوں سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ جب ہمارا اللہ ایک، ہمارا نبی  ایک، ہمارا کعبہ ایک، ہمارا قرآن ایک ہے تو ہم کیونکر ایک دوسرے کے خلاف ہرزہ سرائیاں کرتے پھرتے ہیں۔ کیا ہم سب کو اپنے نبی آخر زمان (ص)  کا وہ حکم یاد نہیں ہے جو اپنے آخری خطبے میں آپ (ص) نے ہمیں دیا تھا۔ کیا آپ (ص) نے نہیں فرمایا تھا کہ نمازوں، روزوں اور حج جیسی اعلیٰ ترین عملوں سے بھی بڑھ کر آپس میں اتحاد و اتفاق کا عمل بہتر اور ضروری ہے

Comments are closed.