Archive for 06/03/2012

اسلام آباد:  افریقی ملک کانگو کے دارالحکومت برازاویل میں اسلحے کے ایک ڈپو میں ہونے والے زوردار دھماکوں کے باعث کم سے کم 206 افراد ہلاک اور سینکڑوں زخمی ہو گئے ہیں۔دھماکے اس قدر زور دار تھے کے ان کی آواز میلوں دور سرحد کے پار جمہوریہ کانگو کے دارلحکومت کنشا سا میں بھی سنی گئی۔برازاویل میں ایک یورپی سفیر نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کو بتایا ہم نے فوجی ہسپتالوں میں کم سے کم 200لاشوں کو گنا ہے اور پندرہ سو کے قریب افراد زخمی ہیں جن میں سے کئی کی حالت تشویش ناک ہے۔صدر کے دفتر کے ایک اہلکار نے ہلاک ہونے والوں کی تعداد دو سو کے قریب بتائی ہے جبکہ فرانسیسی سفارت خانے کے ایک ڈاکٹر کے مطابق پانچ سو کے لگ بھگ افراد زخمی ہیں۔کانگو کے حکومتی ریڈیو پر وزیرِ دفاع چارلس زاچری بووا کا کہنا تھا کہ دارلحکومت میں دھماکے اسلحے کے ایک ڈھیر میں آگ لگنے کی وجہ سے ہوئے۔ انہوں نے شہریوں سے اطمینان رکھنے کو کہا۔ان کا کہنا تھا آپ نے جو دھماکے سنے ہیں ان کا یہ مطلب نہیں ہے کہ ملک میں مارشل لاء لگا ہے یا جنگ چھڑ گئی ہے۔ نہ ہی کوئی بغاوت شروع ہو گئی ہے بلکہ یہ ایک اسلحے کے ڈھیر میں آگ لگنے کے باعث دھماکے ہونے کا واقعہ ہے۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ فوجیوں اور پولیس نے جائے حادثہ کی ناکہ بندی کی دی ہے۔اگرچہ ماضی میں کانگو کو مارشل لاء اور خانہ جنگی کا سامنا رہا ہے لیکن انیس سو نوے کی دہائی کے بعد سے کانگو میں زیادہ تر امن ہی رہا ہے۔

Advertisements

اقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ نے ایک تہلکہ خیز رپورٹ جنرل اسمبلی میں پیش کی ہے جس میں بتایا گیا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں بھارتی افواج نے مختلف آپریشنز کے دوران آٹھ ہزار کشمیریوں کو ماورائے قانون مختلف عقوبت خانوں میں قید کررکھا ہے جبکہ مقبوضہ کشمیر کے مختلف علاقوں میں 2700 گمنام قبریں دریافت ہوئی ہیں ۔ رپورٹ کے مطابق ان قبروں میں مدفون افراد کے ڈی این اے ٹیسٹ کرائے گئے جس سے ثابت ہوا کہ یہ تمام افراد مقامی تھے جن کو بھارت کی سیکورٹی فورسز نے عسکریت پسندوں کا لیبل لگاکر قتل کیا۔ اقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ کی طرف سے جنرل اسمبلی میں پیش کی جانے والی اس رپورٹ نے جمہوریت کے دعویدار بھارت کا مکروہ چہرہ ایک مرتبہ پھر بے نقاب کر دیا ہے۔قیام پاکستان سے لے کر اب تک کشمیری قوم چکی کے دو پاٹوں میں پس رہی ہے ۔ بانی پاکستان نے کشمیر کو پاکستان کی شہ رگ قرار دیا تھا اور 58 برس تک پاکستان اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق کشمیری عوام کو حق خودارادیت دلوانے کے لئے ہر بین الاقوامی فورم پر آواز بلند کرتا رہا لیکن سابق صدر پرویز مشرف نے مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کے لئے دوسرا ، تیسرا ، چوتھا ، پانچواں اور چھٹا آپشن سامنے لاکر پاکستان کے 58 برسوں سے قائم استصواب رائے کے اصولی موقف کو دھندلا کر رکھ دیا۔ رہی سہی کسر موجودہ حکومت کے ،،دانشوروں،، نے بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دے کر پوری کر دی۔ سابق صدر پرویز مشرف اگر ایک فون کال پر امریکہ کے آگے ڈھیر ہوگیا تھا تو آج جمہوریت کی چھتری تلے کشمیر کے مستقبل سے کھلواڑ کرنے والے ،،زعمائ،، نے بغیر فون کال کے ہی بھارت کے سابقہ تمام گناہ معاف کرتے ہوئے اسے دنیا کے تقریباً دوسو ممالک میں سے پسندیدہ ترین ملک قرار دے دیا ہےاقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ کی طرف سے جنرل اسمبلی میں پیش کردہ حالیہ رپورٹ ،،دیگ کے چند دانوں،، کی طرح ہیں جس سے پوری دیگ کی حالت کا بخوبی اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ ایسی ہسٹری شیٹ کے حامل ملک کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے کا عمل پاکستان کی خارجہ پالیسی کی تاریخ کا سب سے بڑا یوٹرن قرار دیا جاسکتا ہے۔ یہ اشارے بھی موجودہیں کہ بھارت کو پسندیدہ ملک امریکی دبائو پر قرار دیا جارہا ہے اگر اس بات میں ذرہ بھر بھی صداقت ہے تو یہ اور بھی افسوسناک اور شرمناک فعل ہے۔ بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے والے دانشور کہتے ہیں کہ یہ اقدام تجارت کو فروغ دینے کے لئے اٹھایا گیا ہے اگر ان دانشوروں کی یہ منطق مان بھی لیا جائے تو اس میں کیا شبہ ہے کہ یقینا بھارت اور پاکستان کے مابین ہونے والی کسی بھی قسم کی تجارت کا توازن ہمیشہ بھارت کی ہم سے کئی گنا بڑی معیشت اور انڈسٹری کے حق میں ہی رہے گا۔ دریں اثناء بھارت تجارت کی آڑ میں مسئلہ کشمیر کو غیر محسوس طریقے سے سردخانے میں ڈال کر پاکستان کی مسئلہ کشمیر کے اوپر گرفت کو مزید کمزور کر دینا چاہتا ہے حکومت پاکستان کو چاہیے کہ بھارت کو پسندیدہ ترین ملک قرار دینے کی پالیسی پر نظرثانی کرے اور برابری کی سطح پر تجارت کو یقینی بنائے۔ مزید برآں حکومت پاکستان کی یہ بھی ذمہ داری ہے کہ وہ اقوام متحدہ کے ورکنگ گروپ کی طرف سے پیش کی جانے والی رپورٹ پر بھی سیاسی او ر سفارتی سطح پر پُرزور آواز احتجاج بلند کرے

دمشق : شام کے صدر بشار الاسد نے اپنے فوجی سربراہوں کو حکم دیا ہے کہ اگر بیرون ملک سے شام میں کوئی فوجی مداخلت کی جاتی ہے تو فوری طور پر اسرائیل پر میزائلوں کی بارش کر دی جائے اور خاص طور پر اس کے فوجی ہوائی اڈوں کو نشانہ بنایا جائے۔ اردن کی ویب سائٹ کی رپورٹ کے مطابق یہ حکم انہوں نے چند روز قبل ایک خفیہ اجلاس میں دیا جس میں شام کی فوج کے سربراہوں اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔ رپورٹ کے مطابق دمشق میں ایک خصوصی آپریشن روم بھی قائم کر دیا گیا ہے جو 24 گھنٹے صورتحال پر نظر رکھے گا اور اس آپریشن روم میں شام کے ساتھ ساتھ ایران کے افسران اور حزب اللہ کے نمائندوں کو بھی رکھا گیا ہے جو کسی بھی بیرونی فوجی مداخلت کی صورت میں مشترکہ آپریشن کرینگے۔ رپورٹ کے مطابق اسی قسم کا ایک آپریشنز روم تہران میں بھی کھولا گیا ہے جس میں ایرانی حکام اور حزب اللہ کے نمائندوں کو رکھا گیا ہے حزب اللہ نے بھی تمام تر صورتحال پر نظر رکھنے کے لیے لبنان میں آپریشن روم قائم کیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ایران اور حزب اللہ نے شامی حکومت کو یقین دلایا ہے کہ شام کے خلاف کسی بھی مداخلت پر اسرائیل کے خلاف ہرممکن کارروائی کی جائے گی۔ ادھرشام میں بین الاقوامی امدادی تنظیم ریڈ کراس حمص شہر کے تباہ حال ضلع بابا عمرو تک رسائی حاصل کرنے میں تیسری مرتبہ بھی ناکام ہو گئی ہے تاہم اس نے وہاں سے باہر آنے والے افراد کو امداد پہنچانا شروع کر دی ہے۔ تنظیم کا کہنا تھا کہ اس نے بابا عمرو سے بھاگے ہوئے افراد میں کھانے پینے کی اشیا اور کمبلوں کی تقسیم شروع کی ہے۔ادھرچین نے شام کی حکومت اور حزبِ مخالف سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ تشدد ختم کریں اور بحران کا پرامن حل تلاش کریں۔چین کی وزارتِ خارجہ سے جاری ایک بیان میں صدر بشار الاسد کی حکومت اور باغیوں سے کہا ہے کہ وہ بغیر کسی شرائط کے مذاکرات شروع کریں جن کی سربراہی کوفی عنان کر رہے ہیں۔ جبکہ اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے کہا ہے کہ شام کے شہر حمص سے باغی فورسز کے پیچھے ہٹنے کے بعد حکومتی فورسز شہریوں پر تشدد کر رہی ہیں اور اس حوالے سے انہیں ’ہیبت ناک رپورٹیں‘ موصول ہوئی ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا ہے کہ شام کے متاثرہ شہروں تک امدادی اداروں کو غیرمشروط رسائی دی جائے۔ادھرشام کے جنوبی قصبہ ڈیرا میں خودکش کار بم دھماکے کے نتیجے میں کم سے کم 7 افراد ہلاک اور درجنوں زخمی ہوگئے۔ شام کی سرکاری خبر رساں ادارے کے مطابق شام کے جنوبی علاقے میں دہشت گرد خودکش بمبار نے کار کو دھماکے سے اڑا لیا جس سے کم سے کم 7 افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔ عینی شاہدین کے مطابق سفید رنگ کی کار ملٹری چیک پوسٹ کے قریب دھماکے سے اڑا دی گئی جس سے اردگرد گھروں اور دفاتر میں کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے۔

گلگت… سانحہ کوہستان کے بعد کشيدہ صورتحال کے تحت 7 روز تک سرکاري سطح پر بند رہنے کے بعد گلگت ميں آج تمام سرکاري دفاتر اور اسکولز کھول ديئے گئے ہيں، تاہم حاضري نہ ہونے کے برابر ہے، 28 فروري کو کوہستان ميں ٹارگٹ کلنگ کے واقعے ميں 16 افراد کو قتل کرديا گيا تھا جس کے بعد گلگت بلتستان ميں امن و امان کي صورتحال انتہائي کشيدہ تھي، صوبائي حکومت کي جانب سے 4 مارچ تک تمام سرکاري دفاتر اور اسکولز بند رکھنے کا فيصلہ کيا گيا تھا، آج جبکہ يہ ڈيڈ لائن ختم ہوگئي ہے تو سرکاري دفاتر اور اسکولز کھل گئے ہيں تاہم مختلف علاقوں ميں اب بھي کشيدہ ہونے کي وجہ سے حاضرياں نہ ہونے کے برابر ہيں، سانحہ کوہستان کے خلاف گزشتہ روز گلگت سے شروٹ جانيوالي انجمن اماميہ کي ريلي پر فائرنگ کے واقعات کے بعد لگايا جانيوالا کرفيو بھي اٹھا ليا گيا ہے، مختلف مقامات پر رينجرز ، پوليس اور اسکاوٹس کے دستے تعينات ہيں، شہر کے کشيدہ حالات سے فائدہ اٹھا کر نامعلوم چور پي آئي اے لنک روڈ کي 12 دوکانوں کا صفايا بھي کرگئے

پشاور… خيبر پختون خوا حکومت نے صوبے ميں کا م کرنے والي 27نجي سيکورٹي کمپنيوں پر پابندي عائد کرکے انکے لائسنس منسوخ کرديئے اور ان کے خلاف کاروائي کا حکم ديا ہے. محکمہ داخلہ خيبر پختون خوا کے ذرائع کے مطابق صوبے ميں کام کرنے والي 27نجي سيکورٹي کمپنيوں پر پابندي عائد کردي گئي ہے . ذرائع کے مطابق جن کمپنيوں کے لائسنس منسوخ کئے گئے ہيں ان ميں سے بيشتر کے صوبے ميں دفاتر ہي نہيں يا پھر انہوں نے رجسٹريشن ہي نہيں کرائي.ذرائع کے مطابق پشاور ميں امريکي قونصليٹ اور اقوام متحدہ کے مختلف مشنز کو سيکورٹي فراہم کرنے والي نجي کمپني بھي محکمہ داخلہ کے پاس رجسٹر نہيں.محکمہ داخلہ نے تمام کمشنر ز کو مراسلہ بھيجا ہے جس ميں غير رجسٹرڈ کمپنيوں کے خلاف نجي سيکورٹي کمپني آرڈنيس 2002کے تحت کاروائي کرنے اور انکے دفاتر سيل کرنے کي ہدايت کي گئي ہے.دوسري جانب نجي کمپني ترجمان کے مطابق کمپني نے لائسنس کي تجديد کے لئے محکمہ داخلہ کو درخواست دي ہے تاہم ابھي تک لائسنس کي تجديد نہيں کي گئي

تہران. . . . .. .. ايران ميں پارليماني انتخابات کے ليے ووٹنگ ہو گي.ايران کے پارليماني انتخابات ميں چار کروڑ 8لاکھ افراد اپنا حق رائے دہي استعمال کريں گے. 31صوبوں ميں پارليماني انتخابات کے لئے تقريبا تين ہزار پانچ سو اميدوار ميدان ميں ہيں جن ميں سے دو سو نوے افراد منتخب ہوکے پارليمنٹ ميں پہنچيں گے.ايران کي اصلاح پسند جماعتوں کي جانب سے بائيکاٹ کا اعلان کيا گيا ہے اور ووٹوں کے شرح ميں کمي کي توقع ہے. ايراني صدر احمدي نژاد نے ووٹ دينے کو قومي فريضہ قرار ديا.ميڈيا کے مطابق پارليماني انتخابات ميں اصل مقابلہ صدر احمدي نژاد اور ملک کے روحاني پيشوا آيت اللہ علي خامنہ اي کے حاميوں کے درميان ہوگا کيونکہ ان دونوں رہنماوں کے درميان کافي عرصے سے چپقلش جاري ہے. پارليماني انتخابات کي کوريج کے لئے 350 غير ملکي نامہ نگار بھي آئے ہوئے ہيں

واشنگٹن … امريکي صدر بارک اوباما نے اسرائيل پر زور ديا ہے کہ وہ ايران پر پيشگي حملے کي سوچ کونظرانداز کردے.اسرائيلي وزيراعظم سے ملاقات سے ايک روز قبل اسرائيلي نواز امريکي لابي کے ايک گروپ سے خطاب ميں امريکي صدر کا کہنا تھا کہ امريکہ اور اسرائيل کا خيال ہے کہ ايران کے پاس جوہري ہتھيار نہيں ہيں. اور ہم ان کے جوہري پروگرام کي نگراني ميں حد سے زيادہ چوکس ہيں. واشنگٹن ميں اجلاس سے خطاب ميں بارک اوباما کا کہنا تھا کہ اب بين الاقوامي برادري کي بھي ذمہ داري بڑھ گئي ہے. ايپاک پاليسي کانفرنس سے خطاب ميں انہوں نے کہا کہ ايران پر پابنديوں کو بڑھايا جارہا ہے. امريکي صدر کا کہنا تھا کہ ايراني رہنماو?ں کے پاس اب بھي درست فيصلہ کرنے کا موقع ہے کہ وہ بين الاقوامي برادري ميں واپس آئيں يا اپنے لئے بند گليوں کاانتخاب کر ليں. امريکي صدر نے کہا کہ ايران کي تاريخ ديکھ کر يہ اندازہ ہوتا ہے کہ انہيں يہ يقين نہيں ہے کہ ايرني حکمران صحيح سميت ميں فيصلہ کريگا. انہوں نے کہا کہ ملٹري اسٹرائيک سے تيل کي قيمتوں ميں اضافہ ہوگا.دوسري جانب واشنگٹن ميں ہي ايپاک کو ايک قبضہ گروپ قرار ديتے ہوئے امريکہ اسرائيل پبلک افئير کميٹي کے کردار کے خلاف احتجاج کياگيا. ايپاک مخالف گروپ کے ايک عہديدار نے کہا کہ پہلے ہي ايپاک نے امريکيوں کوعراق کے خلاف جنگ ميں دھکيل ديا ہے اور اب يہ گروپ ايران کے خلاف جنگ ميں دھکيلنا چاہتا ہے

واشنگٹن . .. . . .. . گزشتہ برس مئي ميں سي آئي اے کے خفيہ آپريشن ميں مارے جانے والے القاعدہ چيف اسامہ بن لادن کے سمندر برد کيے جانے کي اطلاع پر سواليہ نشان لگ گيا ہے.امريکي سيکورٹي ايجنسي اسٹارفورٹ کي خفيہ انٹيلي جنس فائلوں سے حاصل کردہ اي ميل انکشافات کے مطابق القاعدہ چيف کو مارے جانے کے بعد اسلامي طريقے سے سمندر برد کرنے کي خبروں ميں صداقت نہيں بلکہ اسامہ کي لاش کو امريکي رياست ڈيلويئر کے فوجي ائير بيس بھجواديا گيا تھاجہاں سے بعد ميں لاش کو معائنے اور رپورٹ کے ليے مير لينڈ کے امريکي افواج کے ميڈيکل انسٹيوٹ لايا گيا تھا.اي ميل سے يہ بھي معلوم ہو اہے کہ لاش کو سي آئي اے نے خصوصي طيارے سے امريکا پہنچايا

بغداد… عراق ميں مسلح افراد نے سيکورٹي فورسز کي چوکي پر حملہ کرکے 27 پوليس اہلکاروں کو ہلاک کرديا.غيرملکي خبر ايجنسي کے مطابق حديثہ کے علاقے ميں علي الصبح مسلح افراد نے سيکورٹي چيک پوسٹ پر حملہ کرديا.فائرنگ کے واقعے ميں 27 پوليس سيکورٹي اہلکار ہلاک اور 3 زخمي ہوگئے.حملہ اس قدر شديد تھاکہ سيکورٹي اہلکاروں کو سنبھلنے کا موقع نہ مل سکا.واقعے ميں ايک حملہ آور بھي مارا گيا.سيکورٹي فورسز نے علاقے ميں کرفيو نافذ کرديا ہے

صنعاء… يمن ميں زين جيبار کے نزديک القاعدہ کے ساتھ جھڑپ ميں 78 فوجي ہلاک ہوگئے.جوابي کارروائي ميں 25 شدت پسند بھي مارے گئے . غير ملکي خبر ايجنسي کے مطابق زين جيبار کے نزديک فوجي چيک پوسٹ پر القاعدہ کے جنگجووں نے اچانک غير متوقع حملہ کرديا.حملہ آور چيک پوسٹ پر قبضہ کرکے فوجي تنصيبات اور سازوسامان حاصل کرنا چاہتے تھے.فوجي اہلکاروں کي جانب سے جوابي کارروائي ميں 25 شدت پسند بھي مارے گئے.واقعے ميں متعدد فوجي زخمي بھي ہوئے

اسلام آباد … امريکي اعتراضات مسترد کرتے ہوئے پاکستان نے ايران کے ساتھ گيس منصوبہ جاري رکھنے کا اعلان کرديا. وزير خارجہ حنا رباني کھر نے کہا ہے کہ ايران کے ساتھ گيس منصوبہ بغير کسي غير ملکي دباو? کے مکمل کريں گے، بھارت کے ساتھ تجارت کا مطلب مسئلہ کشمير پر مو?قف سے پيچھے ہٹنا نہيں، مارچ کے دوسرے ہفتے ميں پارليماني کميٹي کي سفارشات پارليمنٹ ميں آجائيں گي، برطانيہ نے يورپي مارکيٹ تک رسائي دلوانے ميں اہم کردار ادا کيا. وزير خارجہ حنا رباني کھر اسلام آباد ميں پريس کانفرنس سے خطاب کررہي تھي. انہوں نے کہا کہ ملکي مفاد کے خلاف کوئي فيصلہ نہيں کيا جائے گا، تمام فيصلے ملکي مفاد کو مد نظر رکھ کر کئے جائيں گے، پاک ايران توانائي منصوبہ ملکي مفاد کے تحت آگے بڑھائيں گے اور بغير کسي غير ملکي دباو? کے ايران کے ساتھ گيس منصوبہ مکمل کيا جائے گا. وزير خارجہ نے کہا کہ بھارت کے ساتھ تجارتي تعلقات ميں بہتري ملکي معيشت کے لئے فائدہ مند ہے، کسي بھي ملک کے ساتھ تعلقات ملکي مفاد کے تحت ہوں گے، ان کا کہنا ہے کہ بھارت کے ساتھ تجارت کا مطلب مسئلہ کشمير سے ہٹنا نہيں . انہوں نے کہا کہ مارچ کے دوسرے ہفتے ميں پارليماني کميٹي کي سفارشات پارليمنٹ ميں آجائيں گي اور نيٹو سپلائي کي بحالي کا فيصلہ پارليمنٹ کرے گي. حنا رباني کھر نے کہا کہ پاکستان امن عمل ميں افغانستان کے ساتھ ہے، پاکستان، ايران افغانستان کے امن کا خطے کے امن سے براہ راست تعلق ہے، انہوں نے واضح کيا کہ کسي کے خلاف اپني سرزمين استعمال نہيں ہونے ديں گے. پريس کانفرنس ميں وزير خارجہ حنا رباني کھر نے مزيد کہا کہ امريکي حکام نے سلالہ چيک پوسٹ واقعے پر افسوس کا اظہار کيا ہے،ان کا کہنا ہے کہ برطانيہ نے پاکستان کو يورپي مارکيٹ تک رسائي دلوانے ميں اہم کردار ادا کيا

نیو یارک……دنیا بھر میں ایک ارب افراد معذور ہیں۔ عالمی ادارہٴ صحت اور عالمی بینک نے حال ہی میں انکشاف کیا ہے کہ عالمی سطح پر تقریباً ایک ارب افراد کسی نہ کسی معذوری میں مبتلا ہیں۔ رپورٹ میں دنیا بھر کے ممالک سے کہا گیا ہے کہ ایسے افراد کو قومی دھارے میں شامل کرنے کے لیے اہم اقدامات اٹھائیں جائیں۔ معذوری پر جاری کی جانے والی یہ پہلی عالمی رپورٹ ہے جس میں کہا گیا کہ دنیاکی کل آبادی کا پانچواں حصہ اپاہج ہے ،ترقی یافتہ ممالک میں کل روزگار میں سے44فیصد معذور افراد برسرروزگار ہیں۔ یہ رپورٹ جون میں جاری کی گئی۔

نیویارک……صبح سویر ے نیند سے بیداری کے فوری بعد سگریٹ نوشیپھیپھڑوں، سر اور گردن کے کینسر میں اضافے کا سبب بنتی ہے۔ امریکی نشریاتی ادارے ’سی این این ‘ کے مطابق صبح سویرے تمباکو نوشی کرنے سے کینسر کے خطرات میں اضافہ ہو جاتا ہے۔ ایسے افراد جو نیند سے بیدار ہوتے ہی سگریٹ سلگا لیتے ہیں ان میں پھیپھڑوں، سر اور گردن کے کینسر کے میں مبتلا ہونے کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔ تحقیق سے ان تمباکو نوشوں کی نشاندہی کی جا سکے گی جن میں کینسر کے زیادہ امکانات ہیں۔ دن کے باقی اوقات میں سگریٹ نوشی سے نکو ٹین اور تمباکو کے دیگر مضر رساں اجزاء اس حد تک جسم میں سرایت نہیں کرتے، جتنے صبح بیداری کے بعد پہلی سگریٹ سے انسان کے جسم میں اترتے ہیں۔ وہ لوگ جو بیداری کے بعد31 سے 60منٹ کے دوران سگریٹ پیتے ہیں ان میں پھیپھڑوں کے کینسر میں مبتلا ہونے کے تیس فیصد زیادہ خطرات ہوتے ہیں۔ جو بیداری کے پہلے نصف گھنٹے میں سگریٹ سلگاتے ہیں ان میں80فیصد خطرات ہوتے ہیں۔ پہلے نصف گھنٹے میں سر اور گردن کے کینسر میں مبتلا ہونے کے 60فیصد جبکہ بیداری کے 31سے60منٹ کے دوران 40فیصد خطرات ہوتے ہیں۔ یہ انکشاف امریکاکے کینسر سوسائٹی کے جریدے میں شائع دو مختلف تحقیقات میں کیا گیا۔