خیر پور میں 50 سے زائد شیعہ علماء کونسل اورجے ایس او پاکستان کے عمائدین نے احتجاجا گرفتاری پیش کردی

Posted: 21/02/2012 in All News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

خیرپور میں کالعدم ملک دشمن جماعت سپاہ صحابہ کے دہشتگردوں کی جانب سے مذہبی منافرت پرمبنی ایک جلسہ منعقدکیاتھاجس میں مسلسل شیعہ مخالف نعرے بازی کی گئی تھی۔ علاقہ میں موجود شیعہ مومنین نے جب اس بات پر احتجاج کیا تو مقامی پولیس نے دہشتگردوں کے بجائے ،اُلٹا احتجاج کرنے والے مومنین پر ہی جھوٹی ایف آئی آر کاٹ دی۔جعفریہ پریس کی رپورٹ کےمطابق جب جھوٹی ایف آئی آرمیں درج شیعہ رابطہ کونسل کے رہنما سید مجتبی شاہ کو گرفتارکیا گیا تو 40 افراد نے مجتبی شاہ کی گرفتاری کے خلاف احتجاجا اپنی گرفتاری پیش کرنے اعلان کیا  موصو لہ اطلاعات کے مطابق پولیس اور انتظامیہ کی جانب سے مسلسل ناانصافی اورسید مجتبی شاہ کی گرفتاری کے خلاف شیعہ مومنین اس وقت خیرپور ڈی پی او آفس پر دھڑنا دیے بیٹھے ہوئے ہیں ۔جبکہ 50 سے زائد شیعہ علماء کونسل اورجے ایس او پاکستان خیرپور کے عمائدین نے احتجاجا گرفتاری پیش کردی ہے۔ گرفتای پیش کرنے والوں میں علامہ ارشاد حسین شاہ، علامہ اسد اقبال زیدی، میجر علی عباس،  منور شاہ، مولانا مظہر علی نقوی۔ سید امتیاز شاہ، جمن شاہ، غفور حیدری اور دیگر شامل ہیں-
تازہ ترین اطلاعات کے مطابق پولیس کا شیعہ مومنین کی گرفتاری لینے سے انکار، ڈی پی اور آفس کے سامنے دھرنہ جاری ہے ۔ جبکہ تہجد کی نماز پڑھنے کی تیاریاں شروعکر دی گئی ہیں اورفجر کی نماز ایس پی آفس کی سامنے باجماعت ادا کی جائے گی-

Comments are closed.