کیا خودکش حملوں میں شہید ہونیوالے امریکن تھے؟ جہاد کا اعلان کرنا کالعدم تنظیموں کا کام نہیں، ثروت اعجاز قادری

Posted: 14/02/2012 in All News, Breaking News, Educational News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

موجودہ ملکی حالات پر تبصرہ کرتے ہوئے سربراہ پاکستان سنی تحریک نے کہا کہ امریکہ کے خلاف نعرہ لگانے والوں نے ملک کی سلامتی و خودمختاری کو داؤ پر لگا دیا اور آج ایک بار پھر یہی قوتیں اکٹھی ہو رہی ہیں جو پاکستان کے وجود کو تسلیم نہیں کرتی تھیں۔پاکستان سنی تحریک کے سربراہ محمد ثروت اعجاز قادری نے کہا ہے کہ ملک کا دفاع اور ملک دشمن قوتوں کے خلاف جہاد کا اعلان کرنا ریاست کا کام ہے نہ کہ کالعدم نام نہاد تنظیموں کا، عوام اب ان کے جھانسے میں نہیں آئیں گے، عوام کو تصویر کا غلط رخ دیکھانے والے یاد رکھیں کہ آج 1980ء نہیں 2012ء ہے، پاکستان اب ایٹمی قوت کا حامل ملک ہے اور عوام آج پہلے سے زیادہ باشعور ہو چکے ہیں۔ ملکی سلامتی، بقاء و خودمختاری کیلئے ملک کا ایک ایک بچہ قربانی دینے کو تیار ہے، ملک بچانے کیلئے ملک بنانے والوں کی اولادیں ہی میدان عمل میں ہونگی، جو لوگ جہاد کا نعرہ لگا رہے ہیں وہ جہاد کی شرائط سے بھی واقف نہیں ہیں۔ امریکہ و بیرونی قوتیں ملک کے خلاف سازشیں کر رہی ہیں، ان سازشوں کو ناکام بنانا حکومت کی ذمہ داری ہے اور اس کے لئے ضروری ہے عوام کو اعتماد میں لیکر فیصلہ کن اقدامات کریں۔ بلوچستان کو قومی دھارے میں شامل کرنے کیلئے حکومت کوششوں کو تیز کریں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے موجودہ ملکی حالات پر تبصرہ کرتے ہوئے کیا۔ ثروت اعجاز قادری نے کہا کہ پاکستان سنی تحریک ملک میں عوامی جدوجہد سے جمہوری انقلاب چاہتی ہے کیونکہ موجودہ حکمرانوں اور عوامی نمائندوں نے عوام کو مسائل سے نکالنے کی بجائے مزید مسائل و مشکلات میں مبتلا کر دیا ہے۔ مہنگائی، بے روزگاری، دہشتگردی عروج پر ہے۔ امریکہ کے پیرول پر کام کرنے والی کالعدم تنظیمیں امریکہ کے خلاف نعرہ لگا کر اب عوام کو جھانسہ نہیں دے سکتیں۔ ڈرون حملے قابل مذمت عمل ہے جس کی ہر سطح پر مذمت کی جانی چاہیے، لیکن اس کا مطلب یہ نہیں کہ ڈرون حملوں کی آڑ میں مساجد، مزارات، اسکولوں اور بازاروں کو بم دھماکوں سے اڑا دیا جائے۔ انہوں نے کہا کہ ڈرون حملوں میں 3500 افراد جاں بحق ہوئے جبکہ ان کی آڑ میں انتہا پسند کالعدم تنظیموں نے 35000 ہزار افراد کو شہید کیا، جن میں فوج کے جوان و افسران اور ہر شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد شامل ہیں، کیا یہ شہید امریکن تھے؟ امریکہ کے خلاف نعرہ لگانے والوں نے ملک کی سلامتی و خودمختاری کو داؤ پر لگا دیا اور آج ایک بار پھر یہی قوتیں اکٹھی ہو رہی ہیں، جو پاکستان کے وجود کو تسلیم نہیں کرتے تھے، آج پاکستان کو نقصان پہنچانے کیلئے بیرونی قوتوں کے اشاروں پر کام کر رہے ہیں اور اسلام کے تشخص کو خراب کر کے پیش کر رہے ہیں۔

Comments are closed.