کاروان آل عبا کے سرپرست ڈاکٹرمحسن جعفرکو شہید کر دیا گیا

Posted: 28/01/2012 in All News, Breaking News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Russia & Central Asia

کراچی ڈاکٹر محسن کو انکے گھر کے باہر صبح ۱۰ بجے کے قریب سر پر گولی مار کر شہید کر دیا گیا ہے۔ رپورٹ کے مطابق ڈاکٹر محسن  فیڈرل بی ایریا بلاک ۱۲ ، گلبرگ میں واقع اپنے گھر کے باہر موجود تھے کہ  موٹر سائیکل پر سوار ناصبی وہابی کالعدم تنظیم سپاہ صحابہ کے دہشت گردوں نے فائرنگ کرکے شہید کردیا، شہید کے سر میں گولی لگی اور اسپتال پہنچنے سے پہلے ہی درجہ شہا دت پر فائض ہوئے۔ رپورٹ کیمطابق ڈاکٹر محسن کاروان آل عبا کے سرپرست اور ایک فعال شخصیت تھے، آج صبح وہ اپنے گھر کے باہر موجود تھے تو موٹر سائکل پر سوار پہلے سے گھات لگائے دہشت گردوں نے فائرنگ کردی جسکے نتیجے میں انکے سر پر گولی لگی۔ شہید دو بیٹوں اور تین بیٹیوں کے والد گرامی تھے۔ ابھی کراچی میں شہید ہونے والے تین شیعہ وکلا اور کوئٹہ میں شہید ہونے والے تین جوانوں کا سوئم بھی نہیں ہوا تھا کہ آج صبح ڈاکٹر جعفر محسن کو شہید کردیا گیا۔ شیعہ قوم کی ہونے والی نسل کشی کو حکومتی سر پرستی حاصل ہے اور شیعہ قوم کا غم و غصہ حق بجانب ہے۔ اسپتال میں موجود شیعہ تنظیم کے نمائندے نے بتایا کہ حکومت شاید اس بات کو سمجھ نہیں پارہی یا پھر خود جان بوجھ کر توجہ نہیں دے رہی ہے ۔ اب شیعہ قوم کا صبر کا پیمانہ لبریز ہوچکا ہے اور  پاکستان کی بقا کی خاطر ہماری خاموشی کو شاید ہماری کمزوری سمجھا جا رہا ہے، انہوں نے کہا کہ وعوام اگر بپھر گئی تو پھر شیعہ قوم اپنے راستے میں آنے والی ہر روکاوٹ کو پیروں تلے روندتی چلی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ سازشی عناصر اور ایجنسیاں بھی شیعہ قوم میں تفرقہ ڈالنے کی نئی نئی سازشوں کو تانے بانے بنے میں مصروف ہیں لیکن حکومت جان لے کہ شیعہ قوم متحد ہے اور اپنے خلاف ہونے والی ہر سازش کو بھی سمجھ رہی ہے اور سازشی عناصر پر بھی گہری نظر ہے۔ شہید ڈاکٹر جعفر محسن کا جسد ابھی ضیا الدین اسپتال سے کچھ دیر بعد مسجد خیر العلم  یا رضویہ امام بارگاہ منتقل کر دیا جائے گا۔

گذشتہ کئی روز سےملک میں ملت جعفریہ کے نوجوانوں کی ٹارگٹ کلنگ کا سلسلہ جاری ہے جس میں کالعمد دہشت گرد گروہوں سپاہ صحابہ ،لشکر جھنگوی سمیت القاعدہ اورطالبان دہشت گرد ناصبی  اور وہابی درندے ملوث ہیں ،تاہم حکومت ان دہشت گردوں کے خلاف کوئی کاروائی کرنے سے قاصر ہے اور ملک ان دہشت گردوں کے لئے ایک جنت کی مانند بنا ہوا ہے دہشت گرد ناصبی اور وہابی طالبان دہشت گرد جہاں چاہتے ہیں معصوم اور نہتے  شیعہ مسلمانوں کا خون بہا دیتے ہیں. پاکستان کے مختلف شہروں میں جاری شیعہ نوجوانوں کی مسلسل ٹارگٹ کلنگ میں امریکی و صہیونی گماشتے ملوث ہیں۔ ہم معصوم اور بے گناہ شیعہ نوجوانوں کی شہادتوں پر دہشت گرد اور متعصب گروہوں سپاہ صحابہ ،لشکر جھنگوی سمیت القاعدہ اورطالبان دہشت گرد ناصبی  اور وہابی درندوں کی شدید مذمت کرتے ہیں پاکستان کے مختلف شہروں میں دن دیہاڑے بے گناہ اور معصوم شیعہ نوجوانوں کی دہشت گرد گروہوں کے ہاتھوں مظلومانہ شہادتیں حکومت کی کارکردگی پر ایک سوالیہ نشان ہیں؟ حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اپنی صفوں کے اندر کالعدم دہشت گرد گروہوں کے سرغنہ عناصر اور ان کے معاون ارکان کو نکال باہر کریں کہ جن کا مقصد ملک میں شیعہ سنی فسادات کو ہوا دینا اور اپنے غیر ملکی آقاؤں امریکا و اسرائیل کی ایماء پر مملکت پاکستان کو عدم استحکام کا شکار کرنا ہے۔ ۔جبکہ شیعہ علماء کونسل جعفریہ الائنس اور مجلس وحدت مسلمین اور ان سے منسلک تمام ذمہ داروں  سمیت دیگر ملی تنطیموں نے ان کی مظلومانہ شہادت کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے  کاروان آل عبا کے روح رواں اور آل عباامام بارگاہ گلبر گ کے ٹرسٹی ڈاکٹر محسن جعفر کے بہیمانہ قتل پر جعفریہ الائنس پاکستان کے سربراہ علامہ عباس کمیلی  اور دیگر علماءکرام اور عما ئدین نے اظہار تعزیت کرتے ہوئے دہشت گردوں کے اس ظالمانہ اقدام کی پرزور الفاظ میں مذمت کی ہے اور حکومت سے کالعدم دہشت گرد تنظیم کے قاتلوں کی گرفتاری کا مطالبہ کیا ہے. شہداء کے ورثاء سے اظہار تعزیت اور دلی ہمدردی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ شہداء کا خون رائیگاں نہیں جائے گا اور شہداء کے قاتل ضرور بے نقاب ہوں گے  خدا شہید کو جوار معصومیں ّ سے ملحق کرے اور لواحقین کو صبر جمیل عطاکرے.آمین

Comments are closed.