صرف ایران ہی ایسا ملک ہے جو سُپر پاور‌ کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرتا ہے، عبدالقدوس ساسولی

Posted: 28/01/2012 in All News, Important News, Iran / Iraq / Lebnan/ Syria, Local News, Pakistan & Kashmir, USA & Europe

بیرونی قوتیں نہیں چاہتی کہ پاکستان کے ایران کے ساتھ تعلقات صحیح ہوں، اسی لئے وہ ملک میں افراتفری کا ماحول پیدا کرنا چاہتے ہیں۔ مختلف کالعدم تنظیمیں ان واقعات میں ملوث ہیں جو نام بدل بدل کر اپنے ناپاک عزائم حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ آج تک کسی بھی دہشتگرد کو گرفتار نہیں‌ کیا گیا۔ جب تک ہمارے ملک کے ادارے اور ایجنسیاں بیرونی دباوء میں بنائی گئی پالیسیاں تبدیل نہیں ‌کریں گی، تب تک یہ سلسلہ جاری رہے گا۔ ہم سمجھتے ہے کہ فرقہ واریت اسلام کے خلاف ہے، جمعیت علماء‌ پاکستان ملک میں اتحاد و اتفاق کیلئے جدوجہد کر رہی ہے۔  امریکہ تو اسلام دشمن ملک ہے، وہ نہیں‌ چاہتا کہ کوئی بھی اسلامی ملک ایٹمی طاقت بنے۔ پاکستان کے چند محب وطن سائنسدان تھے، جن کی وجہ سے آج پاکستان واحد ایٹمی قوت ہے۔ دوسری جانب امریکہ پاکستان کو بھی برداشت نہیں‌ کر سکتا کہ وہ ایٹمی طاقت بنا رہا۔ اسے ایٹمی قوت بننے کی وجہ سے آج ہم مزید دباوء کا شکار ہیں اور ان کی نظریں ہماری ایٹمی تنصیبات پر بھی ہیں۔ اگرچہ کے پاکستان ایران سے غریب اور محکوم ملک ہے، لیکن پھر بھی امریکہ نہیں چاہتا کہ پاکستان کے پاس ایٹمی طاقت ہو۔  دوسری جانب ایران تو پہلے سے ہی امریکہ کیخلاف ہے تو امریکہ دوسرے اسلامی ملک کے ایٹمی طاقت بننے کا متحمل نہیں ہو سکتا۔ امریکہ نہیں‌ چاہتا کہ ایک عظیم اسلامی جمہوری ملک ایٹمی طاقت بنےآج یہاں پر فرقہ واریت کو اسی لئے ہوا دی جا رہی ہے، تاکہ یہاں کے لوگ ایران کیخلاف اُٹھ کھڑے ہوں۔ امریکہ یہی چاہتا ہے کہ مستقبل میں ‌اگر ایران پر حملہ کرے تو یہاں پر اُسکی راہ ہموار ہو۔ لیکن اللہ کا شکر ہے امریکہ آج تک اس میں کامیاب نہیں ہو سکا۔ اسلئے میں سمجھتا ہوں کہ امریکہ کو اس سلسلہ میں کامیابی نہیں ملی اور اسی لئے ایران پر حملہ کرنے کی جرات نہیں کر سکتا۔ اور اگر وہ حملہ کرتا بھی ہے تو یہ اسکی تباہی و بربادی کا باعث بنے گا۔پاکستان کی پالیسیاں خود کی بنائی ہوئی نہیں ہیں، یہ ایک محکوم ملک ہے، اس کی تمام تر پالیسیاں دباو کے تحت ہیں، یہ آزاد مملکت نہیں ہے، یہ سپُر پاور کے زیر اثر ہے۔ پاکستان امریکہ سمیت سعودی عرب کے بھی زیر اثر ہے، جسکی وجہ سے پاکستان کہ کوئی مثالی پالیسیاں نہیں ہیں کہ ہم ان کی حمایت کریں۔ آج پاکستان کے تمام ہمسائے اس سے شکایت کر رہے ہیں۔ چاہیئے وہ انڈیا، چین یا ایران ہی کیوں نہ ہو۔ ہم خود اہنے دشمن ہیں۔ عالم اسلام میں اس وقت صرف ایران ہی ایسا واحد ملک ہے، جو نام نہاد سُپر پاوروں‌ کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرتا ہے، کیونکہ وہ ایک آزاد اور اسلامی جمہوری ملک ہے۔

Comments are closed.