فرانسیسی فوجیوں کا قاتل طالبان کا کارندہ تھا

Posted: 23/01/2012 in Afghanistan & India, All News, Important News, USA & Europe

پیرس: فرانسیسی وزیر دفاع جیرار لونگ نے کہا ہے کہ افغانستان میں چار غیر مسلح فرانسیسی فوجیوں کا قاتل افغان سپاہی ماضی میں فوج سے فرار ہوگیا تھا اور وہ طالبان کے ایک درپردہ کارندے کے طور پر افغان فوج میں دوبارہ بھرتی ہوا تھا۔ اس اکیس سالہ افغان فوجی نے جمعے کے روز فائرنگ کر کے چار فرانسیسی فوجیوں کو ہلاک اور پندرہ کو زخمی کر دیا تھا۔ اس ملزم کے طالبان کا کارندہ ہونے سے متعلق فرانسیسی وزیر دفاع نے اپنا بیان اس واقعے کے ایک روز بعد کابل میں اپنے دورے کے دوران ایک افغان جنرل کی طرف سے بریفنگ کے بعد دیا۔ اس حملے کے بعد افغانستان میں فرانسیسی فوجیوں کی طرف سے افغان دستوں کی تربیت اور ان کے ساتھ مشترکہ عسکری کارروائیاں معطل کی جا چکی ہیں۔

Comments are closed.