ناروے : عیسائی دہشت گرد اور درجنوں انسانوں کے قاتل کو نفسیاتی مریض قرار دینے کی کوشش

Posted: 15/01/2012 in All News, Amazing / Miscellaneous News, Important News, Russia & Central Asia, Survey / Research / Science News, USA & Europe

اوسلو : ناروے کی ایک عدالت نے درجنوں افراد کے قتل میں ملوث شدت پسند اینڈرزبیرنگ بریویک کے نئے نفسیاتی معائنہ کا حکم دیا ہے۔ اس سے قبل ہونیوالے معائنہ میں مذکورہ شدت پسندکو فاتر العقل پایا گیا تھا۔ اینڈرز بیرنگ بریوک گذشتہ سال 22 جولائی کو ہونیوالے دھماکوں میں ملوث ہونے کا اعتراف جرم کر چکا ہے۔ اس بدقسمت واقعہ میں بیرنگ بریوک نے پہلے اوسلو میں حکومتی عمارت میں بم دھماکہ کیا جس کے نتیجے میں 8 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔ اسکے بعد وہ ایک مقامی جزیرہ اوٹایا گئے جہاں پر پولیس افسر کا بھیس بدل کر اپنی شناخت چھپائی او ر وہاں گرمیوں میں قائم ہونیوالے نوجوانوں کے کیمپ پر فائرنگ کرکے 69 افراد کو موت کے گھاٹ اتار دیا۔ ان کیخلاف مقدمہ کی سماعت کے دوران عدالتوں کی طرف سے مقرر شدہ نفسیاتی ڈاکٹروں نے بیرنگ بریوک کو فاتر العقل ثابت کرکے انہیں اپنے جرائم کے حساب دینے سے مبرا ثابت قرار دیااور اسے جیل جانے کے بجائے نفسیاتی ڈاکٹروں کی نگرانی میں دیدیا تاہم وکلا کی جانب سے دوبارہ بیرنگ بریوک کی نفسیاتی معائنہ کرنے کے حوالے سے پٹیشنز دائر کی گئی جس میں بیرنگ بریوک کی نفسیاتی بیماری کا دوبارہ جائزہ لینے کی درخواست کی گئی

Comments are closed.