سعودي عرب: ملک میں جاری شیعہ مسلمانوں کی انقلابی تحریک کو روکنے میں ناکامی پر مذہبي پوليس کا سربراہ برطرف

Posted: 15/01/2012 in All News, Breaking News, Important News, Saudi Arab, Bahrain & Middle East, Tunis / Egypt / Yemen / Libya

رياض … سعودي فرماں روا شاہ عبداللہ بن عبدالعزيز نے طاقتور مذہبي پوليس کے سربراہ کو برطرف کرديا ہے.ايک شاہي فرمان کے ذريعے شاہ عبداللہ نے ھيئة الامر بالمعروف والنہي عن المنکر کے سربراہ شيخ عبدالعزيز بن حمين کو فوري طور پر برطرف کرکے انکي جگہ شيخ عبدالعزيز بن عبدالرحمن آل الشيخ کو نيا سربراہ مقرر کيا ہے، شاہي فرمان ميں وجوہات عام طور پر بيان نہيں کي جاتيں، ليکن محسوس یہ ہی کیا جا رہا ہے کہ ملک میں جاری شیعہ مسلمانوں کی انقلابی تحریک کو دبانے اور روکنے میں ناکامی , آل سعود اور مذہبی ادارے کے درمیان میں شدید اختلافات اور دیگر اختیارات کے بارے میں  کافي عرصے سے مذکورہ اتھارٹي( جسکے پاس پوليس کے برابر اختيارات ہيں)کے امور متنازعہ چل رہے تھے، اور چند لوگوں کے علاوہ يہ طاقتور ادارہ عوم ميں تيزي سے اپني مقبوليت اور ساکھ کھو رہا تھا.    

Comments are closed.