بحرینی فوج کیلئے پاکستان سے بھرتی نہ رکی تو تعلقات متاثر ہونگے، ایران

Posted: 04/01/2012 in All News, Breaking News, Important News, Iran / Iraq / Lebnan/ Syria, Local News, Pakistan & Kashmir, Saudi Arab, Bahrain & Middle East, Survey / Research / Science News

لاہور: بحرین میں جمہوریت کے حق میں احتجاج کرنے والوں کے خلاف کریک ڈاؤن کیلئے پاکستانی آرمی کے ریٹائرڈ افسران کی بحرین افواج میں بھرتی پر ایران نے شدید تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ بحرین افواج کیلئے پاکستان سے بھرتی نہ رکی تو پاک ایران سفارتی تعلقات متاثر ہوں گے۔ تاہم پاکستانی فیصلہ سازوں نے ایرانی تنبیہ نظرانداز کرتے ہوئے بھرتی کا عمل جاری رکھا ہے۔ فوجی فاؤنڈیشن کی ذیلی تنظیم فوجی سکیورٹی سروسز لمیٹڈ پاکستانی آرمی، ایئر فورس اور نیوی کے ریٹائرڈ افسران کو ہنگامی بنیادوں پر بھرتی کررہی ہے جن کو سعودی عرب اور بحرین میں بھاری معاوضوں پر تعینات کیا جارہا ہے۔ فوجی فاؤنڈیشن کے ذرائع کے مطابق مشرق وسطیٰ میں سیاسی افراتفری کے تناظر میں تازہ بھرتی کے 90 فیصد سے زائد افراد کو بحرین میں تعینات کیا جارہا ہے جو بحرین نیشنل گارڈ میں خدمات سرانجام دیں گے۔ ہزاروں ایکس سروس مین پہلے ہی بحرین میں خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔اسلام آباد کے سفارتی ذرائع کے مطابق ایران کے نائب وزیر خارجہ بہروز کمال وندی نے تہران میں پاکستانی سفارتی مشن کے سربراہ ڈاکٹر امان رشید کو بلواتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستان کو مطلع کیا جائے کہ پاکستان سے بحرینی پولیس اور فوج میں شمولیت کیلئے بھرتی پر ایران کو شدید تحفظات ہیں۔ صرف مارچ 2011ء میں 1000 افراد کو بھرتی کی گیا۔ آئندہ چند ہفتوں میں مزید 1500 افراد کی بھرتی متوقع ہے۔ 

Comments are closed.