شہید عسکری کا تشییع جنازہ , احتجاج میں تبدلی – ہزاروں سوگواروں کی موجودگی-گورنرہاؤس پر تاریخی دھرنا، تمام مطالبات منظور

Posted: 02/01/2012 in All News, Breaking News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

 شیعت کے خلاف حالیہ ٹارگٹ کلنگ خصوصا محرم الحرام سے لے کراس وقت تک صرف کراچی کے اندر بیسیوں شہادتوں کے باوجودحکمرانوں کی خاموشی پر شیعہ علماء کونسل سندھ کاسراپااحتجاج کا سلسلہ جاری ہے ،رپورٹ کے مطابق ان تمام ترکاوائیوں میں ملوث نامزددہشت گردوں کے اف. آئی .آردرج کرنے سے بھی انظامیہ گریزاں ہے ،شیعہ علماء کونسل کراچی صدرعلامہ علی محمدنے مربوطہ ایس .ایچ. او۔ایس پی اورڈی آئی جی تک کے تمام قانونی دروازہ کھٹکھٹائے مگرانتظامیہ نے تعاون کے بجائے ٹال مٹول کی روایت اپنائی، یہاں تک کل کراچی میں شیعہ علماء کے رہنما،مونین کے خادم اورعظیم سماجی شخصیت ایڈوکیٹ عسکری رضاکو شہید کردیاگیا،شہیدعسکری کی شہادت پرملک بھرسے مختلف سیاسی ،مذہبی اورسماجی شخصیات کے مذمتی بیانات کاسلسلہ جاری ہے اوراس وقت شیعہ علماء کونسل سندھ نے  شہید عسکری کا جلوس تشییع جنازہ کو احتجاج میں بدل کر گورنرہاؤس کارخ کیاہے ۔ جعفریہ پریس کے نمائندہ کی رپورٹ کے مطابق شیعہ علماء کونسل نے گورنرہاؤس کے دروازہ پرشہیدعسکری رضاکاجنازہ رکھ کر ہزاروں سوگواروں کی موجودگی میں دہرنادیاہواہے ،ہمارے نمائندے کی گزارش کے مطابق گورنرہاؤس کے دروازہ پرحضرت غازی عباس کاپرچم لہرادیاگیاہے اورشیعہ علماء کونسل سندھ کے نائب صدرعلامہ جعفرسبحانی ، جنرل سیکریٹری علامہ ناظرعباس تقوی ، کراچی سٹی کے علامہ علی محمد نقوی (جن کی صدارت میں یه احتجاج جاری هے) کے علاوہ علامہ مرزایوسف حسین  اورمولانامنورنقوی موجودہیں ۔ شیعہ علماء کونسل سندھ کے جنرل سیکریٹری علامہ ناظرعباس تقوی نے اپنے خطاب میں کہاکہ مطالبات کی منظوری تک ہمارا احتجاج جاری رہے گا۔آج گھر میں بیٹھنے کا دن نہیں ھے اگر مولا حسین ع کے چاہنے والے ہو تو ظلم کے خلاف آواز بلند کرو ۔ جعفریہ پریس کی رپورٹ کے مطابق شہید عسکری رضا کی بیوہ کہتی ہیں: ” میں جلوسِ جنازہ میں شامل ہوں، میں 5 روز بھی میّت نہیں دفناؤں گی اگر FIR نہ کٹی تمام مومنین سے گزارش ہے کہ اپنے علاقوں سے ٹرانسپورٹ ارینج کر کے شہید عسکری کی مجلسِ شہادت میں گورنر ہاؤس پہنچ جائیں۔ رپورٹ کے مطابق ماتم داری جاری ہے۔ شہید عسکری رضا کی بیٹی خطاب کے دوران غم سے نڈھال ہوکر بہوش ہوگئ۔ لاکھوں شیعہ مسلمان گورنر ہاوس کے باہرشہیدکی بیٹی کے خطاب کے بعد زار و قطار رو رہے ہے مگر اندر بیٹھا متعصب گورنر سندھ خاموش ہے .میں شیعیان علی (علیه السلام) کا گورنر ہاؤس پر تاریخی دھرنا جاری ہے ، دھرنے کو اب تک آٹھ گھنٹے گزر چکے ہیں .جعفریہ پریس کی رپورٹ کے مطابق علما کا وفدکئی گھنٹوں سے مذاکرات کیلئے گورنر ہاؤس کے اندر  گیا ہوا ہے اور ابھی تک باہر نہیں آیا ہے ، مجمع اور تمام علما اور لیڈران کا کہنا ہے کہ اگر جلد ہی مطلبہ نا مانا گیا تو مذاکرات کا دروازہ بھی بند کر دیا جاے گا .تمام کراچی سے شیعیان علی (علیه السلام) جوق در جوق دھرنے میں شامل هو رہے ہیں ،اب تک ایک لاکھ مرد و خواتین گورنر ہاؤس پهنچ چکے ہیں . تمام ماتمی انجمنوں کا رات بھر گورنر ہاؤس پر شب داری  کا پروگرام بنالیا هے . مختلف ماتمی انجمنوں نے اپنے ماتمیوں کو  گورنر ہاؤس بلا لیا . میڈیا نے اس دھرنا کا بایکاٹ کیا ہوا ہے. خواتین و بچوں  کی بہت بری تعداد گورنر ہاؤس پر موجود ہے . تفصیلات کے مطابق عسکری شہید کے قتل کی ایف ای آر جو کہ اصل مجرموں کے خلاف ہے حکومت نے کاٹنے سے انکار کر دیا تھا . اس ایف ای آر میں اصل مجرمان میں  ایس ایس پی  سی ای اے چوہدری اسلم اور اورنگ زیب فاروقی شامل ہیں . اس ماہ محرم میں شعیہ کلنگ میں یہ دونوں برے مجرم  شامل ہیں .

Comments are closed.