حساس اداروں نےیس ایس پی سی آئی اے راجہ عمر خطاب گرفتار,پنجابی تحریک طالبان کے 3 دہشت گردوںمبینہ طور پر 3 کرو ڑ روپے رشوت لی

Posted: 24/12/2011 in All News, Breaking News, Local News, Pakistan & Kashmir

رائع کے مطابق مذکورہ افسر نے طالبان کے 3 دہشت گردوں کو گرفتار کر کے کروڑوں روپے رشوت وصول کر کے رہا کیا تھاحساس اداروں نے ایس ایس پی سی آئی اے کو حراست میں لے لیا مذکورہ افسر نے تحریک طالبان کے 3 دہشت گردوں کو گرفتار کر کے مبینہ طور پر کروڑوں روپے رشوت وصول کر کے رہا کیا مذکورہ افسر پر الزام ہے کہ وہ شہر کے نامی گرامی بلڈروں کے ساتھ مل کر بڑے پیمانے پر ریکوری کے معاملات نمٹا رہے تھے مذکورہ افسر کی ایس ایس پی عہدے سے تنزلی کر کے انسپکٹر بنا دیا گیا۔ انتہائی معتبر ذرائع سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق حساس اداروں نے ایس ایس پی سی آئی اے راجہ عمر خطاب کو حراست میں لے لیا ہے اور 3 دن حراست میں رکھنے کے بعد انویسٹی گیشن کر کے رہا کر دیا۔  ذرائع کا کہنا ہے کہ حساس اداروں کو شکایات موصول ہوئی تھیں کہ ایس ایس پی نے پنجابی تحریک طالبان کے 3 دہشت گردوں کو گرفتار کیا اور مبینہ طور پر 3 کرو ڑ روپے رشوت وصول کر کے رہا کر دیا۔ ذرائع نے مزید دعویٰ کیا کہ حساس اداروں کو اطلاع ملی کہ ایس ایس پی شہر کے نامی گرامی بلڈروں اور بکیوں کے ساتھ مل کر کروڑوں روپے کی ریکوری کے معاملات نمٹا رہے ہیں اور ففٹی پرسنٹ وصول کر رہے ہیں۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ مذکورہ افسر بلڈروں کی نشاندہی پر سرکاری اسلحہ کے زور پر رقم کی لین دین میں ملو ث افراد کو اٹھا کر لاتے تھے اور ہفتے ہفتے غیر قانونی حراست میں رکھنے کے بعد رقم وصول کر کے انہیں رہا کرتے تھے۔ مذکورہ افسر نے شہر کے حساس علاقوں میں بنگلوز کرائے پر حاصل کر رکھے ہیں جہاں مغویوں کو رکھتے تھے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایس ایس پی نے شہر کے بکیوں کے کروڑوں روپے ہڑپ کرنے والے مختلف جرائم پیشہ افراد کو اٹھایا اور بکیوں کی رقم نکلوا کر انہیں بھی رہا کیا۔ ذرائع کا مزید کہنا تھا کہ مذکورہ ایس ایس پی کی عہدے سے تنزلی کر کے اسے انسپکٹر بنا دیا گیا ہے۔ واضح رہے کہ مذکورہ افسر نے شولڈر پروموشن حاصل کر رکھی تھی۔

Comments are closed.