پاکستانی سائنسدانوں نے کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کا کامیاب تجربہ کر لیا ہے، ڈاکٹر ثمر مبارک مند

Posted: 23/12/2011 in All News, Breaking News, Local News, Pakistan & Kashmir, Survey / Research / Science News

نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے تھرکول پراجیکٹ کے سربراہ کا کہنا تھا کہ کوئلہ کے ذخائر سے 10 ہزار میگا واٹ بجلی 30 سال تک حاصل ہو سکتی ہے جبکہ گیس کے ساتھ 100 ملین بیرل ڈیزل بھی 30 سال تک حاصل کیا جا سکتا ہے۔پاکستانی ایٹمی سائنس دانوں نے تھر کے علاقہ میں کوئلے سے بجلی پیدا کرنے کا کامیاب تجربہ کر لیا۔ نجی ٹی وی سے گفتگو میں تھرکول پراجیکٹ کے سربراہ ڈاکٹر ثمر مبارک مند نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت منصوبہ میں دلچسپی نہیں لے رہی۔ سندھ حکومت سے درخواست ہے کہ 9 ارب فراہم کرے۔ 2013ء میں ایک سو میگا واٹ بجلی بننا شروع ہو جائے گی۔ ڈاکٹر ثمر مبارک مند نے کہا کہ کوئلہ کو 11 تاریخ کو آگ لگائی اور اس کے بعد ہائی ائر پریشر دیا تھا جس کے بعد گزشتہ روز کافی زیادہ مقدار میں گیس نکلنی شروع ہوئی ہے جسے ہم نے جلا دیا ہے اس سے صحرا میں رات کو کافی روشنی ہوئی ہے، گیس منصوبہ کے مطابق نکل رہی ہے۔ ڈاکٹر ثمر مبارک مند کا کہنا تھا کہ چین میں ہونے والی کانفرنس میں، میں نے منصوبہ کی تفصیلات بیان کیں تو شرکاء نے قرار دیا کہ یہ منصوبہ پاکستان میں تبدیلی کاباعث بنے گا ہم چند سال بعد سوچیں گے ہم اتنے غریب کیوں ہیں، اس کوئلہ کو پہلے کیوں نہیں نکالا گیا۔ یہ تین سال کا منصوبہ تھا جس کو ڈیڑھ سال میں مکمل کر لیا گیا ہے اور وقت کے ساتھ ساتھ اس سے گیس کی مقدار بڑھتی جائے گی ہم چاہتے ہیں کہ حکومت فنڈ مہیا کرے تاکہ بجلی بنانے کے لیے مشینری خریدی جا سکے۔ ان کا کہنا تھا کہ منظور شدہ منصوبہ کے مطابق اگر رقم فراہم کی جائے تو 2013ء میں 100 میگاواٹ بجلی بننا شروع ہو جائے گی۔ اس کے بعد جتنی بجلی ہم چاہیں گے وہ بن سکتی ہے۔ یہ پراسیس ہمارے کنٹرول میں ہے ان کا کہنا تھا کہ مجھے سندھ حکومت نے بلاک پانچ دیا ہوا ہے اس سے 10000 میگاواٹ بجلی بن سکتی ہے اور یہ بجلی 30 سال تک بنتی رہے گی۔ ان کا کہنا تھا کہ وفاقی حکومت منصوبہ میں فنڈنگ کرنے میں دلچسپی نہیں رکھتی۔ صدر اور وزیر اعظم نے بھی کہا لیکن وزارت خزانہ کی کوئی مجبوریاں ہو سکتی ہیں۔ میں حکومت سندھ سے درخواست کرتا ہوں کہ وہ اپنے وسائل میں سے 9 ارب دے اس سے ملک اور صوبہ کی تقدیر بدل سکتی ہے یہ رقم فراہم کردی جائے تو ہم جلد سے جلد بجلی بنا سکتے ہیں اور 1۰00 میگاواٹ سے زائد بجلی پیدا کرنے کے لئے مزید رقم لی جاتی ہے اس سلسلہ میں کسی بیرونی ملک سے بھی معاہدہ ہو سکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ کوئلہ سے گیس کے ساتھ ڈیزل بھی بن سکتا ہے اور یہ 30 سال میں 100 ملین بیرل ڈیزل حاصل ہو سکتا ہے۔

Comments are closed.