سرینگر: شبیر احمد شاہ،عزادار شیعہ سنی اتحاد کو زک پہنچانے والوں کی سازشوں سے خبر دار رہیں

Posted: 21/12/2011 in Afghanistan & India, All News, Important News, Religious / Celebrating News

سرینگر;پولیس نے حریت کے دو لیڈران شبیر احمد شاہ اور آغا سید حسن کو سنیچر کے روز اُس وقت حراست میں لیا جب وہ  نصراللہ پورہ بڈگام کی طرف جارہے تھے جہاں ایک فحش ویڈیو فلم منظر عام پر آنے کے بعد صورتحال کشیدہ بنی ہوئی ہے۔اطلاعات کے مطابق شبیر شاہ سنیچر کو بڈگام گئے جہاں انہوں نے انجمن شرعی شیعان کے صدر آ غا سید حسن الموسوی سے ملاقات کی۔ دونوں رہنمائوں نے حالات پر کڑ ی نظر رکھنے اور شرپسندوں کے عزائم کو ناکام بنانے کی ضرورت پر زور دیااور دونوں فرقوں کے ذمہ داروں سے اپیل کی کہ وہ مشترکہ طور پر شیعہ سنی برادری کومستحکم بنانے کی طرف دھیان دیںتا کہ شرپسندوں کی ریشہ دیوانیاں کامیاب نہ ہو نے پا ئیں ۔بعد ازں آ غاسید حسن اور شبیراحمد شاہ نصراللہ پورہ کیلئے روانہ ہو ئے تا کہ وہاں جا کر حالات کا صحیح جائزہ لے سکیں لیکن ٹکی پورہ بڈگام میں ہی ریاستی پو لیس نے دونوں رہنمائوں کو گر فتار کر لیا تا کہ وہ نصراللہ پورہ نہ جاسکیں ۔اس سلسلے میں ٹکی پورہ کے مقام پر پہلے سے ہی پولیس کی بھاری نفری تعینات کی گئی تھی اور دونوں لیڈران جونہی وہاں پہنچے تو پولیس نے انہیں آگے جانے کی اجازت نہیں دی اور دونوں کو گرفتار کرلیا۔اس دوران شبیر شاہ نے بڈگام میں ایک فحش ویڈ یو فلم کے منظر عام پر آ نے کے نتیجہ میں پیدا شدہ صورتحال پر اپنی گہر ی تشویش ظاہر کر تے ہو ئے عوام سے اپیل کی ہے کہ وہ تحریک کے وسیع تر مفاد میں ریاست کی شیعہ سنی برادری کی عظیم روایت کو زک پہنچانے کی کسی بھی سازش کو کامیاب نہ ہو نے دیں ۔شاہ نے کہا کسی ایک برادری کے کسی بدکردارشخص کی بدکرداری کی سزا بدکردارشخص کو ملنی چا ہئے نہ کہ اس برادری کو جس کی طرف اسے منسوب کیا گیا ہو ۔شبیرشاہ نے عوام کو یاد دلایا کہ ماضی میں بھی تحریک دشمن عناصر نے شیعہ سنی فساد بر پا کر نے کی کئی بار کوششیں کی تھیں لیکن کشمیر کے حریت پسند مسلمانوں نے ہر بار انکی مزموم کوششوں کو ناکام بنا دیا تھا ،اسی طرح ّآ ج کی اس تحریک دشمن سازش کو بھی ناکام کیا جا نا چا ہئے ۔انہوںنے کہا کہ اسلام میں جس طرح فحاشی اور عریانیت جرم ہے ،اسی طرح اس کی تشہیرکرنا بھی جرم ہے ۔ادھر فریڈم پارٹی کا ایک وفدرنگہ حمام نو ہٹہ گیا جہاں طارق احمد بٹ جسے نو ہٹہ چوک میں زخمی کیا گیا تھا اور جو بعد میں زخموں کی تاب نہ لا کر داعی اجل کو لبیک کہہ گیاتھا ،کے لو احقین سے تعزیت کی

 

Comments are closed.