اوبامہ اپنے کام سے کام رکھیں، ہوگو شاویز

Posted: 21/12/2011 in All News, Important News, USA & Europe

کراکس: امریکی صدر باراک اوباما نے کہا ہے کہ وینزویلا، ایران اور کیوبا کے مابین گرم جوشی سے بڑھتے ہوئے تعلقات وینزویلا کے عوام کیلئے فائدہ مند نہ ہونگے۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق امریکی صدر باراک اوباما نے اخبار ایل یونیورسل کو ای میل انٹرویو کیا ہے کہ وینزویلا ایک خود مختار قوم ہے اور امریکہ اس کے داخلی معاملات میں دخل اندازی کا ارادہ نہیں رکھتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ جلد یا بدیر وینزویلا کے لوگ اس بات کا فیصلہ کر لینگے کہ انسانی بنیادی حقوق کی پامالی کرنے والے ممالک کے ساتھ تعلقات کی نوعیت کیا ہونی چاہئے۔ وینزویلا کے صدر ہوگو شاویز اور ایرانی صدر احمدی نژاد کے مابین ہونے والی حالیہ ملاقات میں تیل پیدا کرنے والے دونوں ممالک سے باہمی تعاون کے فروغ پر اتفاق کیا ہے جس سے کراکس اور واشنگٹن کے مابین تناؤ میں اضافہ ہوگیا ہے کیونکہ امریکہ ایران پر پابندیاں عائد کر کے ایران کو عالمی سطح پر تنہا کرنا چاہتا ہے۔ گزشتہ مئی میں امریکہ نے وینزویلا کی سرکاری تیل کمپنی پی ڈی وی ایس اے پر امریکی قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے پچاس ملین ڈالر کی تیل مصنوعات ایران بھیجنے پر پابندیاں عائد کر دی تھیں۔ ادھر وینزویلا کے صدر ہوگوشاویز نے ملک میں حقوق انسانی اور ایران کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے امریکی صدر باراک اوباما کی تنقید پر شدید ردعمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ اوبامہ کو چاہئے کہ وہ اپنے کام سے کام رکھیں اور دوسروں کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرنے سے باز رہیں۔ غیر ملکی خبر رساں ادارے کے مطابق اپنے ایک انٹرویو میں وینزویلین صدر نے کہا کہ امریکی صدر ہم پر لفظی حملے کر رہا ہے اور یہ کوئی معمولی بات نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ وہ اوبامہ سے یہ کہنا چاہتے ہیں کہ وہ اپنے کام سے کام رکھے۔ اپنے ملک کے نظام حکومت پر توجہ رکھے جو کہ اس کی وجہ سے تباہی کے راستے پر گامزن ہے۔ انہوں نے کہا کہ امریکہ ہمیشہ سے وینزویلا کے اندرونی معاملات میں مداخلت کرتا رہا ہے اور ابھی بھی وہ ایسا ہی کر رہا ہے۔

Comments are closed.