نیٹو سپلائی کو پھر سے بحال کرنا افواجِ پاکستان کے خون سے غداری ہو گی، رحمن شاہ

Posted: 16/12/2011 in All News, Breaking News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir

آئی ایس او پاکستان کے مرکزی صدر کا کہنا ہے کہ امریکہ کا یہ کہنا کہ وہ جلد نیٹو سپلائی بحال کروا لیں گے، اس بات کی جانب اشارہ ہے کہ وہ کوئی منصوبہ بندی کر رہے ہیں حکومت امریکی کی دھمکیوں میں نہ آئے۔امامیہ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن پاکستان کے مرکزی صدر سید علی رحمن شاہ نے کہا کہ اب وقت آ گیا ہے کے حکومت امریکی غلامی کا طوق اپنے گلے سے اتار دے۔ حکومت کو چاہیے کہ وہ نیٹو سپلائی کو پھر سے بحال کرنے کا تصور بھی نہ کرے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نیٹو سپلائی کو پھر سے بحال کیا گیا تو یہ افواج پاکستان کے شھداء کے ساتھ غداری ہو گی۔ امریکی حکام کی طرف سے یہ کہنا کہ ہم نیٹو سپلائی جلد بحال کروا لیں گے، اس سے پتہ چلتا ہے کہ وہ کوئی منصوبہ بندی کر رہے ہیں تاکہ اپنے ناپاک عزائم کو پورا کر سکیں، ہم اس کی سخت الفاظ میں مذمت کر تے ہیں۔ سید رحمن شاہ نے کہا کہ آئی ایس او پاکستان کے نوجوان وطن عزیز کی جغرافیائی اور نظریاتی دونوں سرحدوں کے محافظ ہیں اور کسی طور بھی ہم حکومت کو اجازت نہیں دیں گے کہ وہ اس سنہری موقع کو ضائع کرئے، جس میں ہم امریکی غلامی سے نکل رہے ہیں، امریکہ کے نزدیک مسلمانوں کی جان کی کوئی قیمت نہیں، پاک فوج کی چوکی پر حملہ اور جوانوں کی شہادت ملکی سالمیت اور قومی غیرت پر حملہ ہے، جس کو کسی طور بھی برداشت نہیں کیا جا سکتا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت پاکستان ایران، چین اور ترکی کے ساتھ مل کر ایک الگ بلاک بنائے اور علاقے کی ترقی میں قائدانہ کردار ادا کرے، اب امریکہ کو ہمیشہ کے لئے خدا حافظ کہہ دینے کا وقت آ گیا ہے اور حکومت یہ موقع ضائع نہ کرئے، اگر حکمرانوں نے اس موقع کو گنوا دیا تو آنے والی نسلیں انہیں معاف نہیں کریں گی۔

Comments are closed.