کابل، مزار شریف، عزاداروں پر خودکش اور بم حملے، 52 افراد شہید، 100 سے زائد زخمی

Posted: 10/12/2011 in Afghanistan & India, All News, Breaking News, Religious / Celebrating News, Saudi Arab, Bahrain & Middle East

سٹی کرمنل انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ کے چیف محمد ظاہر کے مطابق دھماکے میں جاں بحق افراد میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں، ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے، تاہم اب تک کسی نے دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔  افغانستان کے دارالحکومت کابل اور شمالی شہر مزار شریف میں دھماکوں میں 52 افراد شہید اور 100 سے زائد زخمی ہو گئے ہیں۔ پہلا دھماکہ کابل شہر کے وسط میں ہوا، جہاں عاشورہ کے جلوس کے سلسلے میں لوگوں کی بڑی تعداد جمع تھی، خود کش دھماکے میں 48 افراد ہلاک اور100 سے زائد زخمی ہوئے۔ سٹی کرمنل انویسٹی گیشن ڈیپارٹمنٹ کے چیف محمد ظاہر کے مطابق دھماکے میں جاں بحق افراد میں بچے اور خواتین بھی شامل ہیں، ہلاکتوں کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے، تاہم اب تک کسی نے دھماکے کی ذمہ داری قبول نہیں کی۔ اس کے کچھ دیر بعد شمالی شہر مزار شریف میں بھی ایک امام بارگاہ کے قریب دھماکہ ہوا۔ سائیکل میں نصب بم پھٹنے سے 4 افراد شہید اور 17 زخمی ہوئے۔ قندھار شہر میں بھی موٹر بائیک پر دھماکے سے 3 افراد زخمی ہوئے۔  دیگر ذرائع کے مطابق افغانستان کے دو شہروں میں محرم الحرام کے موقع پر بم دھماکوں میں 52 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے ہیں۔ پولیس کے مطابق دارالحکومت کابل میں ایک امام بارگاہ کے باہر ایک خودکش حملے میں 48 افراد جاں بحق اور متعدد زخمی ہو گئے۔ پولیس کا کہنا ہے ہلاکتوں کی تعداد میں اضافہ ہو سکتا کیونکہ کئی زخمیوں کی حالت نازک ہے۔ دوسرا واقعہ ملک کے شمالی شہر مزار شریف میں پیش آیا، جہاں ایک مسجد کے قریب بم پھٹنے سے 4 افراد جاں بحق اور 2 زخمی ہو گئے۔ جاں بحق ہونے والوں میں ایک افغان فوجی بھی شامل ہے۔ پولیس کے مطابق ایک سائیکل سوار بم لے جا رہا تھا جو پھٹ گیا۔

Comments are closed.