کیمیاوی ہتھیاروں پر پابندی کا کنونشن

Posted: 30/11/2011 in All News, Breaking News, Important News, Iran / Iraq / Lebnan/ Syria, Russia & Central Asia, Survey / Research / Science News, USA & Europe

ہالینڈ کے شہر ہیگ میں کیمیاوی ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے سلسلے میں ہونے والےسولہویں اجلاس کے دوران ایرانی عوام کے خلاف کیمیاوی ہتھیاروں کے استعمال اور ان کے تباہ کن اثرات پر مشتمل نمائشگاہ برپا کی جائےگی۔ ہالینڈ کے شہر ہیگ میں کیمیاوی ہتھیاروں پر پابندی کے کنونشن کا اجلاس شروع ہو چکا ہے۔ پریس ٹی وی کی رپورٹ کے مطابق اس پانچ روزہ اجلاس میں کیمیاوی ہتھیاروں کی نابودی پربحث کی جائے گي۔رپورٹ کے مطابق  اسلامی جمہوریہ ایران کی شہید فاؤنڈیشن کے نائب سربراہ محسن انصاری نے کہا ہے کہ ہالینڈ کے شہر ہیگ میں کیمیاوی ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ کے سلسلے میں ہونے والےسولہویں اجلاس کے دوران ایرانی عوام کے خلاف کیمیاوی ہتھیاروں کے استعمال اور ان کے تباہ کن اثرات پر مشتمل نمائشگاہ برپا کی جائےگی۔ انھوں نے کہا کہ کیمیاوی ہتھیاروں کے استعمال سے زخمی ہونے  والے ایرانی جانباز بھی اس نمائشگاہ میں حصہ لیں گے اس  نمائشگاہ میں پوسٹر، فوٹو، کتاب اورویڈیو فلم دکھائی جائے گی جس میں امریکہ کی سرپرستی میں ایران کے خلاف استعمال ہونے والے کیمیاوی ہتھیاروں کو دکھایاجائے گا۔ انھوں نے کہا کہ گذشتہ 6 برسوں سے ایرانی جانباز اس اجلاس میں مسلسل شرکت کررہے ہیں اور ایران کی مظلومیت کو دنیا کے سامنے پیش کرنے کا یہ بہترین موقع ہے۔ واضح رہے کہ ہالینڈ کے شہر ہیگ میں کیمیاوی ہتھیاروں کے عدم پھیلاؤ پر مبنی اجلاس آج سے پانچ دن تک جاری رہےگا۔ کیمیاوی ہتھیاروں پر پابندی کے معاہدے کی رو سے کیمیاوی ہتھیار بنانا، ان کو اپ گریڈ کرنا، انہیں رکھنا اور ان کا استعمال ممنوع ہے۔ اس قانون کے باوجود روس اور امریکہ کے پاس کیمیاوی ہتھیاروں کا سب سے بڑا ذخیرہ ہے اور وہ کیمیاوی ہتھیاروں پر پابندی کے کنونشن کی پابندی نہیں کرتے ہیں۔

Comments are closed.