منظور وسان ناقص سیکیورٹی انتظامات کا نوٹس لیں،جعفریہ الائنس

Posted: 30/11/2011 in All News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

وزیرداخلہ سندھ مجالس عزاء کے دوران ناقص سیکورٹی انتظامات کا نوٹس لیں۔جعفریہ الائنس نے کہا ہے کہ سانحہ نمائش چورنگی کے باجود بھی نشتر پارک اور شہر بھر میں منعقد ہونے والی مجالس عزاء میں سیکورٹی برائے نام ہے ،حکومت کالعدم دہشت گرد گروہوں کی سر پرستی کرنے والے ریاستی عناصر کے خلاف کاروائی کرے اور سی سی ٹی وی فوٹیج کی روشنی میں سانحہ نمائش چورنگی میں ملوث کالعدم گروہ کے دہشت گردوں کو سرعام پھانسی دی جائے۔ان خیالات کا اظہار جعفریہ الائنس پاکستان کے مرکزی رہنماؤں سلمان مجتبیٰ علامہ باقر زیدی اورمولانا حسین مسعودی نے جعفریہ الائنس پاکستان کے ہنگامی اجلاس میں سانحہ نمائش چورنگی کے بعد نشتر پارک اور شہر کے مضافاتی علاقوں میں سیکورٹی کے ناقص اور بد ترین انتظامات پر پولیس اور رینجرز کی کارکردگی پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کیا۔جعفریہ الائنس پاکستان کے رہنماؤں کاکہنا تھا کہ نشتر پارک کی مرکزی مجلس عزاء پر دہشت گردوں کے حملہ اور اس کے نتیجہ میں اسکاؤٹس کی شہادت کے باوجود نشتر پارک کی مجلس عزاء کی سیکورٹی کے لئے صرف 10پولیس اہلکار تعینات ہونا انتہائی حیرت انگیز فعل ہے جبکہ نشتر پارک کے اطراف اسکاؤٹس ،ملی تنظیمیں اور گروہ اپنی مدد آپ کے تحت سیکورٹی انتظامات کئے ہوئے ہیں۔انھوں نے کہا کہ اگر ایسی صورتحال میں کوئی سانحہ پیش آیا تو اس کی تمام تر ذمہ داری پولیس اور رینجرز حکام پر عائد ہو گی ، پولیس اور رینجرز حکام یہ کہتے ہوئے نظر آ رہے ہیں کہ ہزاروں کی تعداد میں پولیس اہلکار مجالس عزاء کے حفاظتی انتظامات کے لئے لگائے گئے ہیں لیکن افسوس ناک بات ہے کہ وہ ہزاروں اہلکار کہیں بھی نظر نہیں آ رہے۔ان کاکہنا تھا کہ یکم محرم کے روز ہونیوالے دہشتگردانہ واقعات کے بعد قانون نافذ کرنے والے اداروں کی جانب سے کالعدم دہشت گرد گروہوں کے دہشت گردوں کے خلاف کاروائی نہ کیا جانا ان اداروں کی نا اہلی کا منہ بولتا ثبوت ہیں۔ 

Comments are closed.