قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کے سندھ میں داخلے پر پابندی کی بھرپور مذمت

Posted: 30/11/2011 in All News, Breaking News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

شیعہ علماء کونسل صوبہ پنجاب کے رہنماؤں مولانا عظمت علی‘ چوہدری فدا حسین گھلوی‘ سید ثناء الحق ترمذی‘ ایم ایچ بخاری‘ اظہار نقوی علامہ قاضی غلام مرتضی‘ علامہ سید مشتاق حسین ہمدانی‘ مولانا عارف حسین واحدی‘ سردار کاظم علی خان حیدری‘ سید اصغر بخاری‘ حاجی سید غلام رضا شاہ‘مہر قیصر عباس دادوآنہ‘ فضل عباس جنجوعہ اور دیگر نے حکومت سندھ کی جانب سے قائد ملت جعفریہ پاکستان علامہ سید ساجد علی نقوی کے سندھ میں داخلے پر پابندی کا نوٹیفیکیشن جاری کرنے پر شدید احتجاج کیا ہے اور اس غیر عادلانہ اور غیر منصفانہ اقدام کی بھرپور مذمت کرتے ہوئے اسے امن و امان خراب کرنے کی دانستہ کوشش قرار دیاہے اپنے احتجاجی بیان میں شیعہ علماء کونسل پنجاب کے رہنماؤں نے کہا کہ پاکستان کا ہر امن پسند اور قانون پسند شہری آگاہ ہے کہ علامہ ساجد نقوی ملک میں اتحاد بین المسلمین کی علامت اور اتحاد و اخوت کے پرچارک ہیں وہ پاکستان کے امن کے لیے خطرہ نہیں بلکہ امن کے قیام کے لیے بہت جاندار سہارا ہیں لیکن حکمران طبقہ اور خفیہ ادارے اپنی روایتی روش کو جاری رکھتے ہوئے پرانی فہرستوں پر عمل کرکے اپنے نااہل ہونے کا ثبوت فراہم کررہی ہیں۔ ہمیشہ کی طرح اس سال بھی حکومت سندھ کی طرف سے جاری ہونے والی فہرست میں جہاں علامہ ساجد نقوی کا نام شامل ہے وہاں ایسے متعدد علماء و ذاکرین کے نام بھی شامل ہیں جو اس دنیا سے رخصت ہوگئے ہیں یا معذور وبیمار و مسافر ہیں۔ حکومت سندھ کی طرف سے جاری ہونے والی فہرست جہاں مضحکہ خیز ہے وہاں حکومتیفعالیت اور خفیہ اداروں کی کارکردگی کو بے نقاب کررہی ہے۔ شیعہ علماء کونسل پنجاب کے رہنماؤں نے وفاقی حکومت اور تمام صوبائی حکومتوں سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ روایتی اور غافلانہ طریقہ کار کو ترک کرتے ہوئے ایسی فہرستوں میں صرف دہشت گردوں‘ شرپسندوں اور فرقہ واریت پھیلانے والے افراد کو شامل کریں اور علامہ ساجد نقوی اور ان کے پرامن ساتھیوں اور ملت جعفریہ کے امن پسند و اسلام دوست لوگوں کا نام فوری طور پر خارج کریں تاکہ پاکستان میں امن وامان اور رواداری کا خواب شرمندہ تعبیر ہو اور حکومتی اداروں پر عوام کا اعتماد بحال ہو۔

Comments are closed.