کراچی کے پوش علاقوں کی امام بارگاہوں پر دہشتگرد حملوں کا خطرہ ہے، حساس ادارے

Posted: 29/11/2011 in Advertise Religious, All News, Breaking News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

ذرائع کا کہنا ہے کہ اتوار کو نمائش چورنگی پر ہونے والے فائرنگ کے واقعے کے بعد حساس اداروں نے خبردار کیا ہے کہ محرم الحرام کے دوران گذری کے علاقے ڈیفنس فیز 4، ڈیفنس فیز 6 اور دیگر پوش علاقوں میں واقع امام بارگاہوں میں دہشتگردوں کی جانب سے حملوں کا خدشہ ہے۔حساس اداروں کی جانب سے نمائش چورنگی واقعے کے بعد محرم الحرام کے دوران شہر کے پوش علاقوں میں قائم امام بارگاہوں پر دہشتگرد حملوں کے خطرے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے۔ باخبر ذرائع کا کہنا ہے کہ حساس اداروں نے حکومت سندھ کو اطلاع دی ہے کہ ایسی اطلاعات ہیں کہ محرم الحرام کے دوران دہشتگردوں کے جانب سے شہر کے پوش علاقے ڈیفنس میں قائم امام بارگاہوں پر حملے کا خطرہ ہے، اس مقصد کے لیے دہشتگرد خودکش حملے یا بارود سے بھری گاڑی کے ذریعے حملہ کر سکتے ہیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ سی ویو دھماکے کے بعد بھی ڈیفنس اور سی ویو کے اطراف مشکوک افراد کی نقل و حرکت کو مانیٹر کیا گیا تھا جو مختلف اوقات میں مختلف گاڑیوں میں دکھائی دیئے ہیں۔  ذرائع کا کہنا ہے کہ اتوار کو نمائش چورنگی پر ہونے والے فائرنگ کے واقعے کے بعد حساس اداروں نے خبردار کیا ہے کہ محرم الحرام کے دوران گذری کے علاقے ڈیفنس فیز 4، ڈیفنس فیز 6 اور دیگر پوش علاقوں میں واقع امام بارگاہوں میں دہشتگردوں کی جانب سے حملوں کا خدشہ ہے، لہذا ان علاقوں میں سکیورٹی کے اقدامات کیے جائیں اور امام بارگاہوں کے اطراف سخت خفاظتی انتظامات کیے جائیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ اطلاعات کے مطابق محرم الحرام کے مرکزی جلوس میں سخت سکیورٹی اقدامات دہشتگردوں کا نشانہ ممکنہ طور پر شہر کے دیگر مقامات پر منعقد ہونے والی مجالس ہو سکتی ہیں۔  واضح رہے کہ گذشتہ سال بھی دہشتگردوں نے دس محرم کے مرکزی جلوس کے بجائے چہلم امام حسین ع کے موقع پر مرکزی جلوس میں آنے والے عزاداران کی بس کو نشانہ بنایا تھا اور بعد ازاں ہلاک و زخمی افراد کو جناح اسپتال لانے کے بعد جناح اسپتال میں بھی بم دھماکہ کیا تھا۔

Comments are closed.