سانحہ نمائش چورنگی، شہید زین علی کی نماز جنازہ انچولی میں ادا کی گئی

Posted: 29/11/2011 in All News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

تشیع جنازہ سے قبل مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے علامہ طالب جوہری نے کہا کہ کہ یہ شیعہ قوم کے شہید جوانوں کے جنازے ہیں، اتنی ہی شان سے نکلنے چاہیئں کہ جو اس کا اصل حق ہے۔سانحہ نمائش چورنگی کے ایک شہید بوتراب اسکاؤٹس سے تعلق رکھنے والے زین علی کی نماز جنازہ مسجد و امام بارگاہ خیر العمل انچولی میں ادا کی گئی، جبکہ تدفین وادی حسین قبرستان میں کی گئی۔ جبکہ دوسرے شہید سید اظہر علی کی میت ان کے آبائی علاقے چکوال روانہ کر دی گئی ہے۔ تشیع جنازہ سے قبل مجلس عزا سے خطاب کرتے ہوئے علامہ طالب جوہری نے کہا کہ کہ یہ شیعہ قوم کے شہید جوانوں کے جنازے ہیں، اتنی ہی شان سے نکلنے چاہیئں کہ جو اس کا اصل حق ہے، تفصیلات کے مطابق نماز جنازہ مولانا غلام علی وزیری کی اقتداء میں ادا کی گئی، اس موقع پر مولانا شہنشاہ نقوی، مولانا حسن ظفر نقوی، مولانا مرزا یوسف، محمد مہدی و دیگر رہنماؤں کے علاوہ ملت جعفریہ سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد موجود تھی۔ بعداز نماز جنازہ میت کو جلوس کی شکل میں شاہراہ پاکستان لایا گیا، جہاں مظاہرین نے روڈ بلاک کر دی اور دھرنا دیا، اس موقع پر مظاہرین مطالبہ کر رہے تھے کہ واقعہ میں ملوث عناصر کے خلاف فی الفور کارروائی کی جائے۔ دھرنے کی بعد میت کو وادی حسین قبرستان لے جایا گیا، جہاں شہید کو آہوں اور سسکیوں میں سپرد خاک کر دیا گیا۔  واضح رہے کہ نمائش چورنگی کے نزدیک واقع نشتر پارک میں محرم الحرام اور ایام عزاء کی پہلی مجلس کے دوران کالعدم سپاہ صحابہ کے دہشت گردوں نے اسکاؤٹس کے کیمپ پر فائرنگ کی، جس کے نتیجے میں زین علی اور سید اظہر رضا شہید جبکہ تین افراد شدید زخمی ہو گئے۔ شہید ہونے والے زین علی کا تعلق بوتراب اسکاؤٹس جبکہ سید اظہر رضا کا پاک حیدری اسکاؤٹس سے ہے، جو کہ مجلس عزاء کے دوران سکیورٹی انتظامات پر معمور تھے۔

Comments are closed.