متحدہ عرب امارات نے جمہوریت کے پانچ طرفداروں کو سزا سنائي ہے

Posted: 28/11/2011 in All News, Breaking News, Important News, Saudi Arab, Bahrain & Middle East, USA & Europe

متحدہ عرب امارات کی ایک عدالت نے پانچ جمہوریت پسند کارکنوں کو قید کی سزا سنائی ہے۔فرانسیسی خبررساں ایجنسی کے حوالے سے نقل کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات کی ایک عدالت نے پانچ جمہوریت پسند کارکنوں کو قید کی سزا سنائی ہے۔ امریکہ نواز عرب ممالک میں جمہوریت نام کی کوئی چیز نہیں ہے ایک نامور بلاگر احمد منصور کو تین برس جبکہ چار دیگر افراد کو دو دو برس قید کی سزا سنائی گئی ہے۔ انسانی حقوق کی تنظیموں نے عرب امارات کے اس  اقدام کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ امارات مخالفین کو کچلنے کے لئے نت نئے حربے استعمال کررہی ہے۔متحدہ عرب امارات کی ایک عدالت نے ایک بلاگر اور جمہوریت کے لیے سرگرم چار کارکنان کو ریاست کے رہنماؤں کے خلاف توہین آمیز مواد کی اشاعت کے جرم میں سزائیں سنا دی ہیں۔ احمد منصور نامی بلاگر اور دیگر چار افراد پر الزام تھا کہ وہ انٹرنیٹ کے ذریعے ریاستی رہنماؤں کی توہین کرنے کے مرتکب ہوئے۔  ان کے پاس اپیل کا کوئی حق نہیں ہے۔ ایمنسٹی انٹرنیشنل اور ہیومن رائٹس واچ نے اس مقدمے کی شفافیت پر سوال اٹھاتے ہوئے سزاؤں کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔ امریکہ اور اسرائیلی نواز خلیجی ممالک میں ڈکٹیٹر شب قائم ہے اور ان ممالک میں جمہوریت کا کہیں کوئی نام و نشنان نہیں ہے۔امریکہ کی جمہوریت اور انسانی حقوق کے بارے میں متضاد اور دوگانہ پالیسی یہاں سے  واضح ہوجاتی ہے۔


Comments are closed.