محرم میں علماء کی تقاریر ریکارڈ کی جائیں گی، سیکورٹی کے انتظامات مکمل، مرکزی جلوس 377 کیمروں سے مانیٹر کیا جائے گا

Posted: 24/11/2011 in All News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

کراچی : کمشنر کراچی روشن علی شیخ کی زیرصدارت کمشنر آفس میں علمائے کرام کا اجلاس ہوا جس میں ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمیٰ کراچی محمد حسین سید، کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے ایم ڈی مصباح الدین فرید، مولانا محمد اسد تھانوی، مولانا تنویر الحق تھانوی، قاری محمد عثمان اور دیگر مکاتب فکر کے افراد، ڈپٹی کمشنرز، ڈی ایم سیز کے ایڈمنسٹریٹرز، پاکستان رینجرز، پولیس اور دیگر بلدیاتی اداروں کے افسران شریک ہوئے۔ کمشنر کراچی نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ حکومت امن وسلامتی کیلئے ہر ممکن اقدام کر رہی ہے۔ شرپسندی پھیلانے والوں کیخلاف کارروائی کی جائے گی۔ محرم الحرام میں علمائے کرام کی تقریر کو ریکارڈ کیا جائے گا اور لاؤڈ اسپیکر ایکٹ پر سختی سے عملدرآمد کرایا جائے گا۔ انہوں نے کہاکہ علمائے کرام محرم الحرام میں امن وبھائی چارے کو فروغ دیں اور ملک کی سلامتی کے لئے اقدامات کریں۔ انہوں نے کہا کہ کمشنر آفس میں سینٹرل کنٹرول روم قائم کیا گیا ہے جسے پانچوں ڈپٹی کمشنرز کے کنٹرول روم کے ساتھ منسلک کر دیا گیا ہے۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمیٰ محمد حسین سید نے کہا کہ میونسپل عملے کو ہدایت کر دی گئی ہے کہ شہر میں نازیبا وال چاکنگ وبینرز فوری ہٹائے جائیں۔ پانچوں ڈی ایم سیز سے ہم رابطے میں ہیں۔ فائر بریگیڈ اور ایمبولینس مرکزی جلوس کے ساتھ ہونگی۔ انہوں نے کہا کہ مرکزی جلوس اور مین کوریڈورز کو 377 کیمروں کی مدد سے مانیٹر کیا جائے گا۔ اس موقع پر ڈی آئی جی ایسٹ نعیم بروکا نے اجلاس کو بتایا کہ سیکورٹی کے انتظامات کو مکمل کرلیا گیا ہے۔ علمائے کرام محرم الحرام کے لئے قائم کی جانے والی امن کمیٹی کے نام جلد سے جلد انتظامیہ کو فراہم کریں۔ اس موقع پر قاری محمد عثمان نے کہاکہ علمائے کرام امن وامان کے لئے انتظامیہ کی ہر طرح مدد کریں گے۔ انہوں نے کہاکہ اتحاد میں برکت ہے اور اس میں ملک وملت کی سالمیت ہے۔ اس موقع پر قاری اللہ داد نے کہاکہ سب سے محترم مہینہ محرم الحرام ہے نواسہ رسول حضرت امام حسین نے اپنی جان اسلام کی سربلندی کیلئے دی۔ مولانا تنویر الحق تھانوی نے کہاکہ شرپسند عناصر شہر کا امن خراب کرنا چاہتے ہیں جس کیلئے وہ دیواروں پر غیرمہذب کلمات تحریر کر رہے ہیں جس سے دوسرے فرقوں کی دل آزاری ہو رہی ہے۔

Comments are closed.