اسرائیل کو مصر سے جنگ کے لیے بھی تیار رہنا ہوگا: سابق صہیونی وزیر دفاع

Posted: 24/11/2011 in All News, Breaking News, Important News, Palestine & Israel, Tunis / Egypt / Yemen / Libya

یروشلم: اسرائیلی سابق وزیر دفاع بنیامن بن الیگڈور کا کہنا ہے کہ اسرائیل اور مصر کے درمیان کشیدگی میں دن بدن اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ حالیہ ابتر صورتحال میں دونوں ملکوں کے درمیان جنگ کا چھڑ جانا کسی طرح بھی بعید از امکان نہیں۔ بن الیگڈور کا یہ بیان اسرائیلی چیف آف جنرل سٹاف کے اس بیان کے بعد سامنے آیا ہے جس میں اسرائیلی فوجی سربراہ نے مصر کے اسرائیل سے ملحق علاقے صحرائے سینا میں مسلح سرگرمیوں کے تناظر میں اسرائیل کی اسٹریٹجی ہونے کا عندیہ دیا تھا، ان کا کہنا تھا کہ آج اسرائیل چاروں اطراف سے زلزلے اور طوفان کی زد میں آچکا ہے۔ مرکز اطلاعات فلسطین کے مطابق سابق اسرائیلی وزیر دفاع کا یہ بھی کہنا تھا کہ مصر میں اسلام پسند جماعت اخوان المسلمین کے انتخابات میں کامیابی کے امکانات رون ہیں۔ ان کے مطابق اخوان المسلمین پہلی مرتبہ مصری پارلیمان میں کم از کم ایک تہائی نشستیں حاصل کر لے گی جس کے بعد مصری نظام حکومت کیسا ہوگا اس کا اندازہ لگانا انتہائی مشکل ہے۔ تاہم اسرائیل کو سمجھ لینا چاہیے کہ عنقریب اسے مصر کے ساتھ جنگ کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ انہوں نے صحرائے سینا کو دہشت گردی کا اڈا قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس علاقے نے ہمیشہ اسرائیل کو خطرات سے دو چار کیا ہے

Comments are closed.