جنگ ہوئی تو پاکستان کی حمایت نہیں کریں گے، افغانستان

Posted: 26/10/2011 in Afghanistan & India, All News, Breaking News, Important News, Pakistan & Kashmir, USA & Europe

افغان صدارتی محل کے نائب ترجمان نے کہا ہے کہ افغان صدر کے یہ ریمارکس کہ امریکی یا بھارت کے حملے کی صورت میں افغانستان پاکستان کی حمایت کرے گا، سیاق و سباق سے ہٹ کر نشر کئے گئے ہیں۔  افغان صدارتی محل نے کہا ہے کہ ایک پاکستانی نجی ٹی وی چینل کو انٹرویو میں صدر کرزئی کے بیان کی غلط تشریح کی گئی۔ صدر کرزئی نے اپنے انٹرویو میں کہا تھا کہ ان کا ملک امریکی یا بھارت کے حملے کی صورت میں پاکستان کی حمایت کرے گا۔ ہفتہ کو رات گئے جاری انٹرویو میں صدر کرزئی نے کہا کہ اللہ نہ کرے اگر پاکستان اور امریکہ کے مابین کسی بھی وقت جنگ چھیڑ جاتی ہے تو افغانستان پاکستان کے ساتھ ہو گا۔ صدر کرزئی کے ان خیالات پر کابل میں مغربی حکام نے سخت حیرت کا اظہار کیا تھا۔ صدارتی محل نے کہا ہے کہ صدر کے یہ ریمارکس سیاق و سباق سے ہٹ کر نشر کئے گئے ہیں۔ صدر کے نائب ترجمان سہمک حراوی کا کہنا کہ پاکستانی میڈیا نے بیان کی غلط تشریح کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستانی میڈیا نے اسے غلط طور پر پیش کیا ہے۔ انٹرویو میں صرف صدر کے بیان کے پہلے حصے کو دکھایا گیا، جس میں صدر کرزئی نے کہا کہ جنگ کی صورت میں افغانستان پاکستان کی حمایت کرے گا، اسکی بجائے ان کا اشارہ کسی تنازع کی صورت میں پاکستان سے آنے والوں کو پناہ دینے پر افغانستان کی رضا مندی تھا، جس طریقے پاکستان نے لاکھوں افغانوں کو پناہ دی ہوئی ہے۔ نائب ترجمان نے مزید کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ کے حوالے سے اگر پاکستان سے کوئی جنگ ہوتی ہے تو افغانستان اسکی حمایت نہیں کرے گا۔

Comments are closed.