ٹارگٹ کلنگ، دہشتگردی اور فرقہ واریت کیخلاف ملتان میں مختلف شیعہ تنظیموں کا احتجاجی دھرنا

Posted: 12/10/2011 in All News, Important News, Local News, Pakistan & Kashmir, Religious / Celebrating News

ملتان:  شیعہ رہنمائوں کا مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا کہ بلوچستان میں جس طرح بے گناہ ہزارہ قبائل کا قتل عام کیا جا رہا ہے وہ کسی طور پر بھی قابل برداشت نہیں، بلوچستان کے حکمرانوں کی طرح پنجاب کی حکومت نے بھی دہشتگردوں کو کھلی چھٹی دے رکھی ہے۔ ملک بھر میں اہل تشیع کی ٹاگٹ کلنگ، دہشتگردی اور فرقہ واریت کیخلاف ملتان میں مختلف شیعہ تنظیموں نے احتجاجی دھرنا دیا، جعفریہ رابطہ کونسل کی اپیل پر کچہری روڈ پر انجمن حسینیہ، مجلس وحدت مسلمین، امامیہ سٹوڈنٹس آرگنائزیزیشن، جعفریہ سٹوڈنٹس آرگنائزیشن، وکلاء اور عوام کی بڑی تعداد نے احتجاج میں بھرپور شرکت کی، لوگ ”لبیک یا حسین ع لبیک یا حسین ع ” کی صدائیں بلند کرتے ہوئے کچہری چوک پر پہنچے، اس موقع پر مظاہرین نے امریکا، دہشتگردوں اور حکومت کیخلاف بھرپور نعرہ بازی کی، مظاہرین نے 2 گھنٹے تک سڑک پر پرامن دھرنا دیا۔ شیعہ رہنمائوں نے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ فوری طور پر اہل تشیع کی ٹارگٹ کلنگ روکے، ان کا کہنا تھا کہ بلوچستان میں جس طرح بے گناہ ہزارہ قبائل کا قتل عام کیا جا رہا ہے وہ کسی طور پر بھی قابل برداشت نہیں، بلوچستان کے حکمرانوں کی طرح پنجاب کی حکومت نے بھی دہشتگردوں کو کھلی چھٹی دے رکھی ہے علی پور کا واقعہ جس کی واضح مثال ہے، مقررین کا کہنا تھا کہ عدالتوں کی جانب سے دہشتگردوں کی رہائی کا سلسلہ ختم ہونا چاہئے اور ملک اور اسلام دشمن عنا صر کو بری کرنے کی بجائے پھانسی کی سزائیں دی جائیں، تمام شیعہ تنظیموں نے مشترکہ طور پر حکومت سے اہل تشیع کی ٹارگٹ کلنگ روکنے اوردہشتگردی و فرقہ واریت پر قابو پانے کا مطالبہ کیا۔

Comments are closed.