افغانستان: طالبان میں کوئی اعتدال پسند نہیں سبھی طالبان دہشت گرد ہیں

Posted: 12/10/2011 in Afghanistan & India, All News, Amazing / Miscellaneous News, Important News, USA & Europe

افغانستان کے سابق انٹیلی جنس سربراہ امراللہ صالح نے کہا ہے کہ اعتدال پسند طالبان نام کی کوئی چیز نہیں، سبھی طالبان دہشت گرد اور شدت پسند ہیںاور یہ شوشہ محض اتحادی افواج میں کمی لانے کیلئے چھوڑا گیا۔ نامہ نگار کی رپورٹ کے مطابق  برطانوی ریڈیوسے گفتگو کرتے ہوئے افغانستان کے سابق انٹیلی جنس سربراہ امراللہ صالح نے کہا ہے کہ اعتدال پسند طالبان نام کی کوئی چیز نہیں، سبھی طالبان دہشت گرد اور شدت پسند ہیںاور یہ شوشہ محض اتحادی افواج میں کمی لانے کیلئے چھوڑا گیا۔افغان خفیہ ادارے کے سابق سربراہ نے کہا کہ طالبان میں اعتدال پسند عناصر کا کوئی وجود نہیں، یہ خودساختہ مفروضہ ہے جس کا مغربی ممالک پروپیگنڈاکررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس پروپیگنڈے کا مقصدافغانستان میں اتحادی فوج میں کمی لاناہے۔ امراللہ صالح نے کہا کہ اعتدال پسند طالبان اور القاعدہ کے فلسفے میں کوئی خاص فرق نہیں دونوں کے نظریا ت یکساں ہیں۔اعتدال پسند طالبان کا مفروضہ باقاعدہ تخلیق کیاگیااور یہ شوشہ مغربی ممالک نے چھوڑاہے ایسے طالبان کا کوئی وجود نہیں۔انہوں نے کہا کہ اعتدال پسند طالبان کی اصطلاح ایک نئی ایجاد ہے جس کا حقیقت میں کوئی وجود نہیں ہے اور اس شوشے کا مقصد افغانستان میں فوج کی تعدادمیں کمی لاناہے۔انہوں نے کہا کہ پروفیسر ربانی کوطالبان نے قتل کیا

Comments are closed.